حکومت کرونا کی روک تھام کیلئے ہیلتھ ایمرجنسی نافذ کرے، رحمان ملک

حکومت کرونا کی روک تھام کیلئے ہیلتھ ایمرجنسی نافذ کرے، رحمان ملک

  

اسلام آباد (این این آئی)چیئرمین سینیٹ کمیٹی داخلہ سینیٹر رحمان ملک نے حکومت سے نگران کمیٹی،ہیلتھ ایمرجنسی و لاک ڈاؤن کا مطالبہ کرتے ہوئے کہاہے کہ کرونا وائرس کے مریضوں کی تعداد اگلے چند ہفتوں میں کئی گنا بڑھ سکتی ہے۔ ایک بیان میں سینیٹر رحمن ملک نے کہاکہ کرونا کی روک تھام کیلئے حکومت فوری طور پر ملک میں ہیلتھ ایمرجنسی نافذ کرے۔ انہوں نے کہاکہ صورتحال سے نمٹنے کیلئے 14 مختلف پروفیشنلز پر مشتمل نگران کمیٹی تشکیل دی جائے۔ انہوں نے کہاکہ پارلیمنٹ بند ہے تو نگران کمیٹی کو آرڈیننس کے ذریعے تحفظ دیا جائے۔ انہوں نے کہاکہ حکومت کورونا کی روک تھام کیلئے سنجیدہ اقدامات اٹھائے، حکومت کورونا ٹیسٹ کی صلاحیت کم از کم یومیہ دس ہزار تک بڑھائے،حکومت یا تو کورونا ٹیسٹ مفت کرائے یا بہت واجبی چارجز لیں۔ انہوں نے کہاکہ حکومت فوری طور پر ایک ملین ٹیسٹنگ کٹس، 5000 حفاظتی طبی کٹس اور 500 وینٹیلیٹر درآمد کریں۔ انہوں نے کہاکہ حکومت عطیات و خیرات کی طرف دیکھنے کی بجائے ضروری طبی سامان قومی خزانے سے خریدے۔ انہوں نے کہاکہ عوام کے علاج بھیک مانگنے سے نہیں ہوتے، قومی خزانے پر عوام کا حق ہے، وزیر اعظم کے تقریر سے لگا کہ پی ٹی آئی ٹائیگر فورس بننے کے بعد ہی لاک ڈاؤن کا اعلان کیا جائگا، فورس بنانے میں کم سے کم تین ماہ لگ سکتے ہیں تو دعا ہے خود یہ کورونا وائرس ختم ہو۔ سینیٹر رحمان ملک نے کہاکہ لاک ڈاؤن و کرفیو لگانے میں ہم جتنا دیر کرینگے نقصان اتنا ہی زیادہ ہوگا۔

رحمان ملک

مزید :

علاقائی -