سٹاک مارکیٹ 1200پوائنٹس کی تیزی،سرمایہ کاری 2کھرب بڑھ گئی، ڈالر 56پیسے مزید مہنگا

  سٹاک مارکیٹ 1200پوائنٹس کی تیزی،سرمایہ کاری 2کھرب بڑھ گئی، ڈالر 56پیسے مزید ...

  

کراچی (اکنامک رپورٹر)پاکستان اسٹاک ایکس چینج میں منگل کو ریکوری آئی اور سرمایہ کاروں کی جانب سے مسلسل مندی کے باعث سستے ہونے والے شیئرز کی خریداری کی گئی جس کے باعث کے ایس ای100انڈیکس 1208.24پوائنٹس کے اضافے سے 29ہزار کی نفسیاتی حد کو بحال کرتے ہوئے 29231.63پوائنٹس کی سطح پرپہنچ گیاجبکہ81.58فیصد کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں اضافہ ہوا جس سے مارکیٹ کی سرمایہ کاری مالیت ایک کھرب 90 ارب20کروڑ62لاکھ روپے بڑھ گئی اور کاروباری حجم بھی پیر کی نسبت39.12فیصد زائد رہا۔ گزشتہ روز ٹریڈنگ کے آغاز سے ہی مالیاتی اداروں،میوچل افندز اور بروکریج ہاوسز کی جانب سے منافع بخش کمپنیوں کی پرکشش قیمتوں کا فائدہ اٹھاتے ہوئے خریداری شروع کی جس کے نتیجے میں مثبت رجحان دیکھنے میں آیا اور ٹریڈنگ کے دوران کے ایس ای100انڈیکس 29ہزار کی نفسیاتی حد کو عبور کرتے ہوئے 29320پوائنٹس کی بلند سطح پر پہنچ گیا۔بعد میں منافع کے حصول کی غرض سے شیئرز کی فروخت بڑھنے کے سبب مزکورہ سطح برقرار نہ رہ سکی لیکن مجموعی طور پر تیزی غالب رہی اورمارکیٹ کے اختتام پر کے ایس ای100انڈیکس 1208.24پوائنٹس کے اضافے سے 29231.63پوائنٹس پر بند ہوا۔اسی طرح کے ایس ای30انڈیکس بھی 576.14پوائنٹس کے اضافے سے12861.22پوائنٹس اورکے ایس ای آل شیئرز انڈیکس 715.28پوائنٹس کے اضافے سے 21037.82 پوائنٹس پر بند ہوا۔گزشتہ روز مجموعی طور پر353کمپنیوں کے حصص کا کاروبار ہوا جن میں سے 288کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں اضافہ56کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں کمی اور9کمپنیوں کے حصص کی قیمتیں مستحکم رہیں۔تیزی کے باعث مارکیٹ کی سرمایہ کاری مالیت ایک کھرب90 ارب20کروڑ62لاکھ روپے کے اضافے سے بڑھ کر 56کھرب 20ارب 94کروڑ9لاکھ روپے ہوگئی جبکہ حصص کی لین دین کے لحاظ سے کاروباری حجم22کروڑ18لاکھ65ہزار شیئرز رہا جو پیر کے مقابلے میں 6 کروڑ 23 لاکھ 95 ہزار شیئرززائد ہے۔گزشتہ روزقیمتوں میں اتارچڑھاؤ کے حساب سے رفحان میظ کے حصص کی قیمت 487روپے کے اضافے سے 6987 روپے اورکولگیٹ پامولو کے حصص کی قیمت99روپے اضافے سے 2049روپے ہوگئی جبکہ نمایاں کمی کے لحاظ سے سیپ ہائر ٹیکس کے حصص قیمت61.49روپے کمی سے758.50روپے اورسیپ ہائر فائبرکے حصص کی قیمت 46روپے کمی سے574روپے ہوگئی۔ نمایاں کاروباری سرگرمیوں کے لحاظ سے ہیسکول پٹرو ل،میپل لیف، کے الیکٹرک، آئل اینڈ گیس ڈیولپمنٹ،یونٹی فوڈز،فوجی سیمنٹ پایونیر سیمنٹ،نشاط ملز،ڈی جی خان سیمنٹ اور ٹی آر جی پاکستان کے شیئرز سرفہرست رہے۔علاوہ ازیں انٹر بینک تبادلہ مارکیٹ میں مارچ کے آخری روز بھی روپے کی بے قدری کا سلسلہ جاری رہا اور ڈالر 56 پیسے مہنگا ہوگیا۔ گزشتہ کئی دنوں سے ڈالر کی قیمت میں اضافے کا سلسلہ جاری ہے جس کے بعد ڈالر ملکی تاریخ کی بلند ترین سطح پر پہنچا ہے۔انٹر بینک تبادلہ مارکیٹ میں مارچ کے آخری روز ڈالر کی قدر میں 56 پیسے کا اضافہ ہوا جس کے بعد ڈالر کی قیمت 166 روپے 70 پیسے رہی۔فروری کے اختتام پر ایک امریکی ڈالر کی قدر 154 روپے 23 پیسے تھی۔ یوں مارچ میں ڈالر کی قدر 12 روپے 47 پیسے بڑھی ہے جو ایک مہینے میں ڈالر کی قدر میں 8فیصد اضافہ ہے۔

اسٹاک مارکیٹ

مزید :

صفحہ آخر -