لاک ڈاون کے مارے غریبوں کوایک اور دھچکا

      لاک ڈاون کے مارے غریبوں کوایک اور دھچکا

  

میر پور خاص(بیورورپورٹ)لاک ڈاؤن میں غریب شہریوں کو یوٹیلٹی اسٹورز سے68 روپے فی کلو چینی کی فراہمی بند، شہری بازار سے90 روپے فی کلو چینی خریدنے پر مجبورہیں۔بیروزگاری میں یوٹیلٹی اسٹورز بھی عوام کو ریلیف نہ دے سکے۔ مہنگائی سے پریشان عوام کے لیے یہاں بھی آٹا، چینی جیسی اشیاء خورونوش غائب ہیں۔ میرپورخاص کے مختلف علاقوں میں عوام کو مہنگائی سے ریلیف دینے کے لیے یوٹیلٹی اسٹورز قائم ہیں جہاں سبسڈی کے ساتھ آٹا، چینی اور دالوں سمیت دیگر روزمرہ استعمال کی اشیا فروخت کی جاتی ہیں۔ چند ماہ کے دوران مہنگائی کے بڑھتے طوفان میں یہ یوٹیلٹی اسٹورز بھی غیر فعال ہو گئے ہیں۔عوام نے بتایاکہ خاص کر آٹا، چینی اور چاول جیسی اشیاء کا حصول یہاں بھی ممکن نہیں ہے۔ غریبوں کا چینی اور آٹا دکانوں پر بیچ دیا جاتا ہے۔ شہریوں لیاقت علی، وقار عرف برفی اور فدا حسین نے بتایاکہ حکومت نے اعلان کیا ہے کہ اربوں روپے کے بجٹ سے یوٹیلٹی اسٹورز پر سامان فراہم کیا جارہا ہے۔ایک ہفتے سے چکر کاٹ رہے ہیں لیکن چینی اور آٹا نہیں مل رہا اور نہ ہی یوٹیلٹی انچارج اور عملے کا رویہ عوام سے درست ہے۔ دوسری جانب یوٹیلٹی اسٹورز انتظامیہ کا کہنا ہے کہ نئے ریٹس آگئے ہیں جن کے مطابق عوام کو تمام چیزیں بازار کی نسبت کم قیمت پر فروخت کی جا رہی ہیں مگر مانگ زیادہ ہونے سے مشکلات کا سامنا ہے۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -