کرونا وائرس:55سے زائد ادویات غائب کرنیکا انکشاف،ریٹ ڈبل

  کرونا وائرس:55سے زائد ادویات غائب کرنیکا انکشاف،ریٹ ڈبل

  

خان پوربگاشیر(نمائندہ پاکستان) کروانا وائرس کے باعث ادویات کی طلب میں اضافہ ہوگیا۔ میڈیسن ہول سیل ملتان لاک ڈاون کے باعث جان بچانے والی ادویات سمیت 55سے زائد ادویات مارکیٹ میں نایاب ہوچکی ہیں۔ان ادویات میں مرگی، دمہ(بقیہ نمبر39صفحہ6پر)

،دل کی بیماریوں کی ادویات،مختلف درد کش ادویات،جراثیم کش ادویات،آنکھوں کے آپریشن کے بعد استعمال ہونے والی ادویات اورٹی بی کی ادویات شامل ہیں جبکہ 23سے زائد ادویات ایسی ہیں جو بلیک مارکیٹ میں 200سے 300فیصد سے زائد قیمتوں پرفروخت ہورہی ہیں اوریہ ادویات بلیک میں صرف خاص خاص جاننے والوں کو فروخت کی جارہی ہیں۔ملٹی نیشنل کمپنیاں خام مال انڈیا،چائنہ،کوریاوغیرہ سے دبئی اپنے دفاتر منگوا کر پھراس کے لیبل اورپینکنگ تبدیل کرکے 200رو پے کلووالا خام مال 4سے 5ہزارروپے کلوکا ظاہرکرتی ہے اوراسی حساب سے اپنی پروڈکٹس مہنگی فروخت کرتی ہیں۔ملٹی نیشنل کمپنیاں جب مختلف اداروں کواپنی پروڈکٹس فروخت کرتی ہیں تو ان کے ریٹ مقامی کمپنیوں کے مقابلے کے ہوجاتے ہیں۔جبکہ وہی ادویات میڈیسن ہول سیل ملتان میں کئی گنا زیادہ ریٹ پر فروخت کی جاتی ہیں۔ڈرگ ایکٹ کے تحت کوئی بھی کمپنی اپنی ہر پروڈکٹ مارکیٹ میں مہیا کرنے کی پابند ہے ورنہ اس کالائسنس کینسل ہونا کیا جاسکتا ہے۔

ریٹ ڈبل

مزید :

ملتان صفحہ آخر -