ملتان:واپڈا ہسپتال سے ڈاکٹرز غائب، مریض پیرامیڈیکل سٹاف کے حوالے

  ملتان:واپڈا ہسپتال سے ڈاکٹرز غائب، مریض پیرامیڈیکل سٹاف کے حوالے

  

ملتان (نیوز رپورٹر)میپکو/واپڈا ملازمین کی جانوں کو تحفظ فراہم کرنے کے لئے قائم واپڈا ہسپتال ملتان میں ڈاکٹرز کو اپنی جانوں کے لالے پڑ گئے۔ کرونا وائرس کے خوف سے لاکھوں روپے ماہانہ تنخواہیں لینے والے ڈاکٹرز اپنے گھروں میں محدودہوگئے۔ میپکو او(بقیہ نمبر46صفحہ6پر)

واپڈا کے ہزاروں ملازمین و افسران کے علاج و معالجے کی سہولیات ختم کردی گئیں۔ ذرائع کے مطابق حکومت ہدایات کی روشنی میں جہاں پاکستان بھر کے ڈاکٹرز ہسپتالوں اور آئسولیشن وارڈز میں اپنی جانوں کی پرواہ کئے بغیر مریضوں کو علاج کی بہترین سہولیا ت فراہم کررہے ہیں اور انہیں اولین ترجیح دیتے ہوئے ہنگامی بنیادوں پر علاج کررہے ہیں وہاں پاکستان کی سب سے بڑی بجلی کی تقسیم کارکمپنی میپکو،جنریشن کمپنی تھرمل پاوراسٹیشن مظفرگڑھ اور نیشنل ٹرانسمیشن اینڈ ڈسپیچ کمپنی لمیٹڈ (این ٹی ڈی سی ایل) کے ملازمین اور افسران کو سہولیات فراہم کرنے کے لئے بنایاگیا مگرمریضوں کو ریلیف نہیں ملتا۔ واپڈا ہسپتال ملتان میں میڈیکل سپریٹنڈنٹ ڈاکٹر خلیل الرحمن کے اعلان پر کرونا وائرس کے مریضوں کا علاج کرنے کے لئے قائم کیاگیا آئسولیشن وارڈ بند کردیاگیاہے اور ملازمین کو دھتکارا جارہاہے۔ درجنوں ڈاکٹرز کی ٹیم میں ایک بھی ڈاکٹر ہسپتال میں نہیں آرہا اور خود کو گھروں میں آئسولیٹ کرکے اپنی زندگی محفوظ بنائی جارہی ہے۔ بیمار ہونے والے ملازمین کو ایمرجنسی وارڈ میں پیرامیڈیکل سٹاف کے حوالے کردیاگیاہے جو اپنی مرضی سے انجکشن اور دوائیاں دے کر مریضوں کو رخصت کررہے ہیں۔ذرائع نے بتایاکہ گریڈ 18اورگریڈ19کی ماہانہ تنخواہیں اور الاؤنسز لینے والے ڈاکٹرز حضرات مریضوں سے کترانے لگے ہیں اگر اپنے رومز میں بیٹھے بھی ہوں تو سٹاف کے ذریعے مریضوں کو باہر سے ہی ٹالا جارہاہے جس سے مریضوں کی بڑی تعدادمشکلات کا شکار ہوگئی ہے۔ 50بیڈ کے واپڈا ہسپتال ملتان میں سنگین نوعیت کے جان لیوا امراض دل، کینسر، سانس اور دیگر امراض کے مریضوں کی چیکنگ نہیں کی جارہی ہے اورصرف کاپیوں پر لکھی گئی دوائیاں (Repeat) کی جارہی ہیں جس میں سے اکثر ادویات ہسپتال میں ناپید ہیں۔ واپڈا ہسپتال کی ڈسپنری کے انچارج کا رویہ بھی انتہائی غیر مہذب ہے جو اپنی مرضی اورجان پہچان والے مریضوں کو عدم دستیابی والی ادویات کی سلپ بھی بنواکر دے رہاہے اور زیادہ تر ملازمین کو او پی ڈی بند ہونے کا کہہ کر ٹالاجارہاہے جس سے گریڈ ایک سے گریڈ 16تک عہدے کے ملازمین مسائل کا شکار ہورہے ہیں۔ ذرائع نے بتایاکہ سینئر میڈیکل آفیسر زڈاکٹر علی عباس، ڈاکٹر انعام نیازی، ڈاکٹر کاشف نیازی، ڈاکٹر اسامہ احمد، ڈاکٹر خواجہ زبیر،چائلڈ سپیشلسٹ ڈاکٹر محمد سجاد، لیڈی ڈاکٹرز سعدیہ طالب، شہناز اختر، بشریٰ، آئی سپیشلسٹ ڈاکٹر جہانزیب لون سمیت دیگر ڈاکٹرز منظر عام سے غائب ہیں اور سیلف آئسولیشن اختیار کرکے اپنے گھروں میں محدودہیں۔ میپکو اور واپڈا کے ملازمین نے وزیر اعظم پاکستان عمران خان، وفاقی وزیر پاور ڈویڑن عمر ایوب، وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار اور واپڈا کے اعلیٰ حکام سے ڈاکٹرزکی غیر حاضریوں، ڈاکٹرز اور ڈسپنسری کے سٹاف کے خلاف کاروائی کرنیکا مطالبہ کیاہے۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -