تل کے بیجوں میں 50فیصد سے زائدتیل موجود،ماہرین زراعت

تل کے بیجوں میں 50فیصد سے زائدتیل موجود،ماہرین زراعت

  

قصور (اے پی پی):ماہرین زراعت نے کاشتکاروں کو ہدایت کی ہے کہ وہ تل کی زیادہ سے زیادہ کاشت کرکے بہتر پیداوار کے حصول سے بھاری مالی منافع حاصل کرسکتے ہیں تائے پنجاب 90اور پی 40-7کی کاشت کے بہترین نتائج حاصل ہوسکتے ہیں تل کے بیجوں میں 50فیصد سے زائدتیل اور 22فیصد سے زائدپروٹین ہوتی ہے جبکہ کھل میں 42فیصدپروٹین ہوتی ہے اس کا تیل کھانے کے علاوہ ادویات کنفکشنری اور روغنی نان کی تیاری میں بھی استعمال ہوتاہیپاکستان میں تل کی فصل کا اوسط رقبہ 85ہزار ایکڑ ہے جس سے 200سے 400کلوگرام فی ایکڑ پیداوارحاصل کی جارہی ہے۔

لیکن تحقیق سے ثابت ہوتاہے کہ اگرتل کی ترقی دادہ اقسام کاشت کی جائیں تو 700 سے800 کلوگرام فی ایکڑ پیداواربھی حاصل ہوسکتی ہے۔

 اگرزمین کے انتخاب تیاریوقت کاشت موزوں اقسامشرح بیج طریقہ کاشتکھادوں کے استعمالپودوں کی بروقت گوڈی آبپاشی اور بیماریوں کے تدارک کو یقینی بنایاجائے توکاشتکار منافع بخش پیداوارحاصل کرسکتے ہیں۔\378

مزید :

کامرس -