دوسرا ون ڈے: پاکستان نے رنز کا پہاڑ بھی سرکرلیا، آسٹریلیا کو 6وکٹوں سے شکست، سیریزبرابر 

دوسرا ون ڈے: پاکستان نے رنز کا پہاڑ بھی سرکرلیا، آسٹریلیا کو 6وکٹوں سے شکست، ...

  

لاہور (سپورٹس رپورٹر) پاکستان نے دوسرے ون ڈے انٹرنیشنل میچ میں آسٹریلیا کو 6 وکٹوں سے شکست دے کرسیریز1-1 سے برابر کر دی۔ بابر ثمیچ کے بہترین کھلاڑی قرار پائے مک ڈرمٹ کی سنچری رائگاں چلی گئی، امام الحق کی مسلسل دوسری سنچری، کپتان بابر اعظم کی شاندار بیٹنگ 83 گیندوں پر114رنزبنائے۔ خوشدل شاہ کے 17 گیندوں پر 27 رنز،قذافی سٹیڈیم لاہور میں پاکستان اور آسٹریلیا کی کرکٹ ٹیموں کے درمیان کھیلے گئے دوسرے ون ڈے انٹرنیشنل میچ میں قومی کرکٹ ٹیم کے کپتان بابر اعظم نے ٹاس جیت کر آسٹریلیا کو پہلے بیٹنگ کرتے کی دعوت دی۔ آسٹریلیا نے پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے مقررہ 50 اووروں میں 8 وکٹوں کے نقصان پر 348رنز بنائے۔ 349رنزکے ہدف کے حصول کے لیے بعد میں بیٹنگ کرتے ہوئے پاکستان نے 49 اووروں 4 وکٹوں کے نقصان پر352 رنزبناکر میچ جیت لی۔آسٹریلیا نے جب بیٹنگ کا آغاز کیا تو پہلے اوور کی تیسری گیند پر کپتان ایرون فنچ کی وکٹ سے محروم ہوگئی جب شاہین شاہ آفریدی نے ان کو ایل بی ڈبلیو کردیا۔دوسری وکٹ کی شراکت میں گزشتہ میچ کے ہیرو ٹریوس ہیڈ اور بین میک ڈرمٹ کے درمیان 162 رنز کی شان دار شراکت ہوئی۔ پاکستان کو دوسری کامیابی زاہد محمود نے  ٹریوس ہیڈ کو آؤٹ کرکے دلائی جب وہ 70 گیندوں پر 6 چوکوں اور 5 چھکوں کی مدد سے 89 رنز بنا کر خطرناک ثابت ہو رہے تھے۔میک ڈرمٹ کا ساتھ دینے مارنس لبوشین میدان میں آئے اور ان کا بھرپور ساتھ دیا۔آسٹریلیا کا اسکور 35 اوورز میں 237 رنز پر پہنچا تھا کہ 108 گیندوں پر 10 چوکوں اور 4 چھکوں کی مدد سے 104 رنز بنانے والے مک ڈرمٹ محمد وسیم کی گیند پر حارث رؤف کا کیچ دے گئے۔مارنس لبوشین 59 رنز بنا کر خوشدل شاہ کی وکٹ بنے تاہم اس وقت آسٹریلیا کا اسکور 44 ویں اوور میں 272 تک پہنچ گیا تھا۔ الیکس کیری آؤٹ ہونے والے پانچویں بلے باز تھے، جن کی اننگز 5 رنز تک محدود رہی، انہیں محمد وسیم نے آؤٹ کیا۔ کیمرون گرین بھی 5 رنز بنا سکے اور 301 رنز پر شاہین شاہ آفریدی کی وکٹ بنے۔مارکوس اسٹوئنس ایک رن کے فرق سے اپنی نصف سنچری مکمل نہ کر پائے اور 33 گیندوں پر 5 چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے 49 رنز بنا کر شاہین شاہ کا نشانہ بنے۔آسٹریلیا کی جانب سے آخری آؤٹ ہونے والے بلے باز شان ایبٹ تھے جنہوں نے 16 گیندوں کا سامنا کیا اور 28 رنز بنا کر شاہین شاہ آفریدی کی چوتھی وکٹ بنے۔پاکستان کی جانب سے  شاہین شاہ آفریدی نے 4، محمد وسیم جونئیر نے دو جبکہ زاہد محمود اور خوشدل شاہ نے ایک ایک وکٹ حاصل کی۔349 رنز کے ہدف کے تعاقب میں پاکستان کی جانب سے اننگز کا آغاز فخرزمان اور امام الحق نے کیا دونوں نے بہترین بیٹنگ کرتے ہوئیپہلی وکٹ کی شراکت میں 118 رنز کا اضافہ کیا پاکستان کے پہلے آؤٹ ہونے والے کھلاڑی فخر زمان تھے وہ 67 رنز بنا کرماکس اسٹوائنس کی گیند پر بولڈ ہوگئے۔  امام الحق نے مسلسل دوسری سنچری بنائی وہ106رنزبنا کرایڈم زیمپا کی گیندپر کیچ آؤٹ ہوئے۔ اسکے بعد بابر اعظم اور محمد رضوان نے شاندار بیٹنگ کرتے ہوئے تیسری وکٹ کی شراکت میں 80 رنز کا اضافہ کیا  بابر اعظم83 گیندوں پر 114رنز بناکر ایلس کی گیند پرمارنس لبوشین کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہوئے اس وقت پاکستان کا سکور 309رنز تھا۔ محمد رضوان 23 رنز بنا کر کرایڈم زیمپا کی گیند پر ایبٹ کے ہاتھوں کیچ آوٹ ہوئے۔ خوشدل شاہ کی شاندار بیٹنگ 17 گیندوں پر  2 چھکوں اور 2 چوکوں کی مدد 27 رنز بناکرناٹ آؤٹ رہے افتخار احمد 11 رنز بناکر ناٹ آؤٹ رہے۔ آسٹریلیا کی جانب سے ایڈم زیمپانے دو، ایلس اورکرماکس اسٹوائنس نے ایک ایک کھلاڑی کو آؤٹ کیا۔

میچ

مزید :

صفحہ آخر -