محکمہ خوراک کی کارروائیاں‘ گرانفروشی پر جرمانے عائد 

  محکمہ خوراک کی کارروائیاں‘ گرانفروشی پر جرمانے عائد 

  

پشاور(سٹی رپورٹر) صوبائی حکومت اور وزیر خوراک خیبر پختونخوا کی ہدایت کی روشنی میں محکمہ خوراک کے افسران نے پشاور کے علاقے پھندو، چمکنی اور ملحقہ بازاروں کا اچانک دورہ کیااور اشیائے ضروریہ آٹا،چینی دودھ و دہی کی قیمتیں،معیار اور گوداموں میں موجود سٹاک کو چیک کیا گیا اور نان بائیوں کی روٹی کے وزن کا بھی معائنہ کیا۔اس موقع پر محکمہ خوراک کے اہلکاروں کے مختلف دوکانداروں کو بے ضابطگی میں ملوث ہونے پر 46000 روپے جرمانہ کیا جب کہ دیگرکے خلاف متعلقہ پولیس اسٹیشن میں مراسلہ جمع کر دیا اور متعدد دکاندارو ں کو گراں فروشی سے اجتناب برتنے کے احکامات جاری کئے۔اس موقع پر افسران نے دکانداروں کو سختی سے ہدایت کی کہ منافع خوری،کم وزن،سرکاری نرخنامہ نہ رکھنے،ناقص صفائی اور زائد المعیاد اشیاء فروخت کرنے والوں کے ساتھ سختی سے نمٹا جائے گا اور ان کے خلاف سخت قانونی کاروائی کی جائے گی اور وہ کسی قسم کے معافی کے مستحق نہیں ہونگے۔انہوں نے کہا کہ بازاروں اور مارکیٹوں پر چھاپوں کایہ سلسلہ جاری رہے گا اور قانونِ کی خلافِ ورزی پر سزا دی جائے گی۔دریں اثناء وزیر خوراک نے محکمہ کے حکام سے کہا ہے کہ صوبائی حکومت نے عوام کو ریلیف دینے کے لئے سبسڈی دی ہے جس کے تحت عوام کو سستے دامو پر آٹا میسر ہوگا علاوہ ازیں اشیاء خورد کی سستے داموں پر فراہمی کے لیے سستے بازار قائم کرنے کے ساتھ ضلعی انتظامیہ کو بھی اقدام اٹھائے کی ہدایت کی گئی ہے اس لئے محکمہ کے افسران اپنی کاروائی میں مزید تیزی لاتے ہوئے رمضان المبارک میں عوام کو بھرپور ریلیف دیں۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -