وزیراعظم عمران خان اکثریت کھوچکے ہیں از خود مستعفی ہوں: سکندر حیات شیر پاؤ

وزیراعظم عمران خان اکثریت کھوچکے ہیں از خود مستعفی ہوں: سکندر حیات شیر پاؤ

  

      پشاور(سٹی رپورٹر)قومی وطن پارٹی کے صوبائی چیئرمین سکندر حیات خان شیرپاؤ نے کہا ہے کہ وزیر اعظم عمران خان قومی اسمبلی میں اکثریت کھو چکے ہیں لہٰذا انھیں اپنے عہدے سے مستعفی ہوجانا چاہیے۔وطن کور پشاور میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ استعفیٰ کے ذریعے وزیر اعظم عدم اعتماد کی کامیابی کی صورت میں حزیمت سے بچ جائیں گے لہٰذا انھیں اس آئینی بحران کے خاتمے کیلئے اقتدار سے الگ ہو نا پڑے گا۔اس موقع پر پی ٹی آئی ٹائیگرز فورس متحدہ عرب امارات کے وائس چیئرمین ربی اللہ خان نے اپنے ساتھیوں اور خاندان سمیت قومی وطن پارٹی میں شمولیت کا اعلان کیا۔سکندر شیرپاؤ نے کہا کہ اگر عمران خان مستعفی نہ ہوئے یا عدم اعتماد کی کاروائی کا جمہوری طریقے سے سامنا نہ کیا تو ملک میں انارکی پھیلے گی۔انھوں نے قومی اسمبلی کے سپیکر سے بھی اپنا آئینی کردار ادا کرنے کا مطالبہ کیا اور کہا کہ وہ اس صورتحال میں جانبداری کا مظاہرہ کرنے سے گریز کرے۔انھوں نے کہا کہ وزیر اعظم کی عدم اعتماد کے نتیجے میں اپنے عہدے سے علٰحدہ ہونے کی صورت میں حزب اختلاف کی جماعتوں پر بھی بھاری ذمہ داری عائد ہو گی کہ وہ ملک میں انتخابی اصلاحات سمیت عام انتخابات کے انعقاد کیلئے راہ ہموار کرے۔انھوں نے کہا کہ وزیراعظم نوشہ ایوار پڑھ لے کیونکہ ان کے اتحادی بھی ان کا ساتھ چھوڑ چکے ہیں۔انھوں نے کہا کہ خط اور اس قسم کے دیگر بہانوں کے ذریعے حکومت کو طول نہیں دیا جاسکتا۔پارلیمنٹ کے باہر ایک لاکھ کارکن جمع کرنے کی بجائے اسمبلی میں اپنی مطلوبہ تعداد پوری کرے۔انھوں نے کہا کہ عمران خان نے اقتدار میں آنے سے پہلے قرضے لینے کی بجائے خود کشی کو ترجیح دینے کا وعدہ کیا تھا لیکن حکومت میں آنے کے بعد انھوں نے اپنے تمام وعدوں پر یوٹرن لیا۔انھوں نے کہا کہ نہ تو ایک کروڑنوکریاں پیدا کی گئی اور نہ ہی 50لاکھ گھر نظر آرہے ہیں۔پی ٹی آئی کی حکومت نے عوام کی مشکلات میں بے تحاشہ اضافہ کیا ہے۔اشیائے خورد و نوش کی قیمتوں میں گزشتہ ساڑھے تین سال میں ہوشربا اضافہ ہوا۔دوائیوں کی قیمتیں 500فیصد بڑھی۔چھوٹے صوبوں کی محرومیوں میں اضافہ ہوا ہے۔صوبائی حکومت نے این ایف سی ایوارڈ اور بجلی کے خالص منافع کی مد میں مرکز سے اپنا حصہ لینے کیلئے آئینی کردار ادا نہیں کیا۔گیس اور تیل کی رائلٹی کے حصول کیلئے خاطر خواہ اقدامات نہیں کئے گئے۔انھوں نے کہا کہ خراب طرز حکمرانی اور ناقص کارکردگی نے عوام کو پی ٹی آئی سے بد ظن کردیا ہے۔انھوں نے کہا کہ پی ٹی آئی کی حکومت نے گزشتہ چار سال میں جتنا قرضہ لیا اتنا گزشتہ حکومتوں نے 70سال میں نہیں لیا۔اس موقع پر قومی وطن پارٹی ضلع بنوں کے رہنماء فرمان اللہ خان اور غفور خان کے علاوہ پارٹی عہدیدار اور کارکن بھی موجود تھے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -