ایلون مسک کا اپنے خلاف 258 ارب ڈالر کی دھوکہ دہی کا مقدمہ خارج کرنے کی درخواست

ایلون مسک کا اپنے خلاف 258 ارب ڈالر کی دھوکہ دہی کا مقدمہ خارج کرنے کی درخواست
ایلون مسک کا اپنے خلاف 258 ارب ڈالر کی دھوکہ دہی کا مقدمہ خارج کرنے کی درخواست
سورس: Twitter

  

واشنگٹن (ڈیلی پاکستان آن لائن) ایلون مسک نے ایک امریکی جج سے کہا ہے  کہ وہ ان کے خلاف 258 ارب ڈالر  کا دھوکہ دہی کا مقدمہ خارج کرے ۔ مقدمے  میں ایلون مسک  پر کرپٹو کرنسی ڈوج کوائن کی حمایت کے لیے پائرامڈ سکیم چلانے کا الزام لگایا گیا ہے۔

مین ہٹن کی وفاقی عدالت میں فائلنگ میں مسک اور اس کی الیکٹرک کار کمپنی ٹیسلا کے وکلاء نے ڈوج کوائن  کے سرمایہ کاروں کے مقدمے کو ایلون  مسک کے 'معصوم اور اکثر احمقانہ ٹویٹس' پر 'افسانے کا ایک فرضی کام' قرار دیا۔ وکلاء نے کہا کہ سرمایہ کاروں نے کبھی بھی یہ وضاحت نہیں کی کہ مسک کس طرح کسی کو دھوکہ دینے کا ارادہ رکھتے تھے  یا انہوں نے کن خطرات کو چھپایا ہے، اور یہ کہ ان  کے  یہ بیانات  'Dogecoin Rulz' اور 'no highs, no lows, only Doge' دھوکہ دہی کے دعوے کی حمایت کرنے کے لیے بہت مبہم ہیں۔

مسک کے وکلاء نے کہا، 'ایک جائز کرپٹو کرنسی جس کا مارکیٹ کیپ تقریباً 10 ارب ڈالر ہے ،  کے بارے میں حمایت کے الفاظ، یا اس کے بارے میں مضحکہ خیز تصویریں ٹویٹ کرنے میں کچھ بھی غیر قانونی نہیں ہے ، اس لیے عدالت کو مدعیوں کے تصورات کو رد کرتے ہوئے شکایت کو خارج کرنا چاہئے۔'

ایلون مسک کے خلاف دائر کیے گئے  نقصانات کے  اعداد و شمار مقدمہ دائر ہونے سے پہلے 13 ماہ میں ڈوج کوائن  کی مارکیٹ ویلیو میں ہونے والی  کمی سے تین گنا زیادہ ہیں۔ ڈوج کوائن فاؤنڈیشن بھی اس مقدمے میں فریق ہے اور مقدمے کا اخراج چاہتی ہے۔

مزید :

بزنس -