ریل رکی رہی، دفتری خرچے کی رفتار بڑھتی رہی

ریل رکی رہی، دفتری خرچے کی رفتار بڑھتی رہی
ریل رکی رہی، دفتری خرچے کی رفتار بڑھتی رہی

  


لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک) ہچکیاں لیتی ریل چلانے والے پاکستان ریلوے ہیڈ کوارٹر اور ڈویژنل دفاتر کا انتظامی خرچ چھ ارب 23 کروڑ روپے پر پہنچ گیا ہے۔ سرکاری دستاویزات کے مطابق اخراجات کی مد میں 43 ارب 67 کروڑ روپے خرچ کئے گئے ہیں۔ دنیا نیوز کے مطابق ریلوے کا 20 ارب روپے آمدنی کا ہدف پورا نہ ہو سکا اور مالی سال 2011-12 میں32 ارب 12 کروڑ 78 لاکھ روپے کا خسارہ ہوا۔ اعداد و شمار کے مطابق ریلوے نے سود کی مد میں سٹیٹ بینک کو ایک ارب 23 کروڑ روپے ادا کئے۔ 15ارب 55 کروڑ روپے ریونیو میں سے مسافر ٹرینوں سے 10 ارب 78 کروڑ حاصل ہوئے، مال گاڑیوں سے ایک ارب 53 کروڑ روپے حاصل ہو سکے۔ خسارہ پورا کرنے کیلئے وفاقی حکومت نے30 ارب 46 کروڑروپے امداد دی۔

مزید : ڈیلی بائیٹس