سرحد پار تجارت کا مقصد فوت ہورہا ہے ، میر واعظ عمر فاروق

سرحد پار تجارت کا مقصد فوت ہورہا ہے ، میر واعظ عمر فاروق

  

 سرینگر (آن لائن) کل جماعتی حریت کانفرنس میر واعظ گروپ کے چیئرمین میر واعظ عمر فاروق نے سرحد پار تجارت کو دونوں اطراف کے عوام کے مفاد میں آسان اور رکاوٹوں سے پاک بنانے کا مطالبہ کیا ہے انہوں نے نوجوانوں سے کہا ہے کہ وہ حکومت کی طرف سے روزگار کی فراہمی کے انتظار میں اپنا قیمتی وقت ضائع نہ کریں بلکہ اپنا کاروبار کریں وہ درگاہ حضرت نقش بند صاحب میں ایک اجتماع سے خطاب کررہے تھے ۔ میر واعظ نے مین اسٹریم جماعتوں کو ماہ رمضان کے دوران ریلیاں نکالنے پر تنقید کا نشانہ بنایا کیونکہ ان کے بقول سکیورٹی چیکنگ اور ٹریفک جام کی وجہ سے لوگوں کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ سرحد پار تاجروں کے درمیان رابطوں کے فقدان اور مواصلاتی رابطوں کی عدم سہولیات کی وجہ سے تجارت بری طرح متاثر ہوئی ہے یہ بات افسوسناک ہے کہ سرحد پار تجارت کا زیادہ تر حصہ اب بھی غیر ریاستی تاجروں کے ہاتھ میں ہے جو کہ ریاست کا معاشی استحصال اور کشمیری تاجروں کے مفادات کیخلاف ہے جن کیلئے تجارت شروع کی گئی تھی ۔ انہوں نے کہا کہ سرحد پار تجارت جس مقصد کیلئے شروع کی گئی تھی وہ اس پر پورا نہیں اترا جارہا اور غیر ریاستی تاجروں کو محکمہ کسٹمز کی بے جا مداخلت کی وجہ سے آہستہ آہستہ اس کا مقصد فوت ہورہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ سرحد پار تجارت کا براہ راست فائدہ کشمیری عوام کو پہنچنا چاہیے اور وہ اپنے دورہ پاکستان کے دوران پاکستانی اسٹیبلشمنٹ کے ساتھ یہ معاملہ اٹھائیں گے علاوہ ازیں میر واعظ نے نوجوانوں سے کہا ہے کہ وہ حکومت کی طرف سے انہیں روزگار فراہم کرنے کا انتظار کریں بلکہ اپنا کاروبار شروع کریں انہوں نے کہا کہ معاشی طور پر پسماندہ ریاست میں بے روزگاری میں تیزی سے اضافہ ہورہا ہے جو کہ نوجوانوں کیلئے بڑی تشویش کا معاملہ ہے ۔

مزید :

عالمی منظر -