ہیڈ ماسٹر سمیت اساتذہ پر تشدد کرنیوالے 30 سے زائد ملزمان کیخلاف مقدمہ درج

ہیڈ ماسٹر سمیت اساتذہ پر تشدد کرنیوالے 30 سے زائد ملزمان کیخلاف مقدمہ درج

  

لاہور(سپیشل رپورٹر)شادباغ کے علاقہ عامر روڈ پر سرکاری سکول کے اندر گھس کر تین ٹیچروں اور ہیڈ ماسٹر سمیت 9 افراد پر تشدد کا نشانہ بنانے پر پولیس نے 30 سے زائد ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کرکے ان کی گرفتاریوں کیلئے چھاپے مارنے شروع کر دیئے ہیں۔ معلوم ہوا ہے کہ ایک روز قبل رات کو شادباغ عامر روڈ پر واقع سرکاری سکول میں میٹرک کے رزلٹ کے بعد ہونے والی چھٹیوں کے باوجود سٹاف موجود تھا۔ جو کہ بچوں کو رزلٹ کے کارڈ دینے کیلئے اس کی تیاری کر رہا تھا۔ اسی دوران وہاں پر امان الٰہی بٹ آیا اور اس نے ہیڈ ماسٹر شاہد اقبال سے کہا کہ سرکاری فیس 450 روپے ہے آپ 100روپے زائد وصول کر رہے ہو۔ ہیڈ ماسٹر شاہد اقبال کے منع کرنے پر وہ وہاں سے چلا گیا اور چند منٹ بعد ہی اپنے 30 سے زائد ساتھیوں کے ساتھ سکول میں آیا اور وہاں موجود تمام ٹیچروں حاجی لیاقت، رانا عالم، فقیر بھٹی، ہیڈ ماسٹر شاہد اقبال، باﺅ کلرک، تہذیب، منیر، عمران اور شہزاد وغیرہ کو بدترین تشدد کا نشانہ بناتے ہوئے ان کے کپڑے پھاڑ دیئے اور وہاں سے فرار ہوگئے۔ واقعہ کی اطلاع ملنے پر شادباغ پولیس موقع پر پہنچ گئی جہاں انہوں نے ملزمان کے خلاف مختلف دفعات کے تحت مقدمات درج کرکے ان کی گرفتاریوں کیلئے چھاپے مارنے شروع کردیئے ہیں۔ سکول انتظامیہ کے مطابق ملزمان کی سرپرستی تھانہ شادباغ میں تعینات تھانیدار کر رہا ہے۔ جبکہ تھانیدار عبدالمجید نے اس امر کی سختی سے تردید کرتے ہوئے کہا ہے کہ ملزمان کو گرفتار کرنا انویسٹی گیشن پولیس کا کام ہے۔ انویسٹی گیشن پولیس کے مطابق ملزمان کی گرفتاریوں کیلئے چھاپوں کا سلسلہ ابھی جاری ہے امید ہے انہیں جلد ہی گرفتار کرلیا جائے گا۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -