بھرتی کے بغیر اساتذہ ڈائر یکٹویٹ آف پبلک انسٹرکشن میں بے ضابطگی کی انتہا

بھرتی کے بغیر اساتذہ ڈائر یکٹویٹ آف پبلک انسٹرکشن میں بے ضابطگی کی انتہا

لاہور(ریحان چودھر) ڈائریکٹوریٹ آف پبلک انسٹرکشن پنجاب افسران خواب غفلت میں سرشار، اساتذہ کی بھرتیوں میں بے قاعدگی و بے ضابطگی عروج پر پہنچ گئی ضلع نارواول میں دس ایسے افراد بطور استاد مختلف سکولوں میں خدمات انجام دے رہے ہیں جن کی بطور اساتذہ بھرتی ہی نہیں کی گئی تفصیلات کے مطابق ضلع نارووال کے مختلف سکولوں میں کلاس 4 کے 10 ایسے پی ٹی سی ٹیچرز کا انکشاف ہوا ہے جن کا سروس ریکارڈ محکمہ میں موجود نہیں اور نہ ہی ان کو بطور استاد بھرتی کیاگیا مگر ڈی پی آئی ایلیمنٹری کے دستخطوں سے ان افراد کے تبادلے ہوتے رہے صورتحال کا علم ہونے پر سیکرٹری سکولز اسلم کمبوہ نے معاملہ کی انکوائری کے لئے ایڈیشنل سیکرٹری سکولز سلیم قیصر کی سربراہی میں چار رکنی کمیٹی تشکیل دی جس کے یدگر ممبران میں دبئی سیکرٹری آصف مجید ڈی پی آئی ایلیمنٹری اسلام صدیق اور ڈائریکٹر ایڈمن مشتاق مہر کو نامزد کیاگیا ذرائع کے مطابق گریڈ 16 سے نیچے کے تمام بین الاضلاعی تبادلوں کی ذمہ داری ڈی پی آئی ایلیمنٹری پر عائد ہوتی ہے اس کے باوجود انہی کے ڈیپارٹمنٹ کے دو ارکان کو انکوائری کمیٹی کا ممبر بنادیا گیا کہ اپنی غفلت اور لاپرواہی کے باعث اٹھنے والے اس مسئلے کی انکوائری وہ خودکریں دریں اثناءاس معاملے میں صرف ای ڈی او ایجوکیشن نارووال کو ٹرانسفر کیاگیا ہے اور باقی زمہ داران کے خلاف تاحال کوئی کارروائی عمل میں نہیں لائی گئی جبکہ کمیٹی کی جانب سے تاحال کوئی حتمی رپورٹ بھی پیش نہیں کی گئی ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1