پرت سرکارانتقالات غائب کرنے میں ریونیو افسر ، ریکارڈ روم اور کلیریکل سٹاف شامل

پرت سرکارانتقالات غائب کرنے میں ریونیو افسر ، ریکارڈ روم اور کلیریکل سٹاف ...

  

لاہور (اپنے نمائندے سے) موضع نیاز بیگ میں پرت سرکار انتقالات غائب کرنے میں ریونیو آفیسر، ریکارڈ روم سٹاف اور کلریکل سٹاف بھی شامل ہونے کا انکشاف ہوا ہے۔ موضع نیاز بیگ میں گزشتہ 12 سال کے دوران 4 ہزار سے زائد پرت سرکار انتقالات وقفہ وقفہ سے غائب کئے گئے جن میں بعض پرت سرکار نیاز بیگ میں تعینات رہنے والے ریونیو افسران نے جان بوجھ کر جمع ہی نہیں کرائے اور بعض پرت سرکار انتقالات ریکارڈ روم میں تعینات کلرکوں کی بدنیتی کی وجہ سے غائب ہوئے جبکہ سینکڑوں انتقالات کو نیاز بیگ کے لینڈ مافیا کے اشاروں پر کام کرنے والے کلیریکل سٹاف نے معمولی رقم وصول کرکے غائب کردیاجس کی وجہ سے ایک لاکھ سے زائد افراد اس وقت بھی اپنی ملکیتی وراثتی اور خرید کردہ زمینوں کے حصول کیلئے مختلف عدالتوںاور محکمہ اشتمال کے افراد کے دفتروں میں دھکے کھا رہے ہیں مزید معلوم ہوا ہے کہ جن زمینوں کے پرت سرکار انتقالات غائب کئے گئے ہیں ان میں زمینوں کے رقبہ تعدادی ایک کنال،5 کنال 10 کنال ،20 کنال سے لیکر 50 کنال تک بھی موجود ہیں۔ علاوہ ازیں غریب شہریوں کے خرید کردہ 10 مرلہ اور 5 مرلہ پلاٹوں کے پرت سرکار بھی غائب کر دیئے گئے ہیں زیادتی کی بناءپر ہے کہ پرت سرکار غائب کرنے والے کسی بھی اہلکار کے خلاف کوئی قانونی کارروائی نہیں کی جارہی ہے جس کی وجہ سے یہ پریکٹس ابھی تک ویسے ہی چل رہی ہے۔ عدالتوں میں خوار ہونے والے سینکڑوں شہری محکمہ اشتمال کے اعلیٰ آفیسروں کے پاس جا جا کر اس مسئلے کا حل نکالنے کی استدعا کر چکے ہیں مگر تاحال کوئی حل نہیں نکال جا سکا اور سینکڑوں شہریوں کی زندگی بھر کی داﺅ پر لگی ہوئی ہے۔ روزنامہ پاکستان کی رپورٹ کے مطابق 2011ءکے غائب شدہ پرت سرکار انتقالات کے نمبران درج ذیل ہیں۔

73599، 73605، 73607، 73613، 73617، 73601، 73642، 73643، 73644، 73645، 73646، 73647، 73650، 73651،73653، 73652، 73654، 73655، 73656، 73657، 73658، 73659، 73660، 73661، 73662، 73663، 73665، 73666، 73667، 73668، 73670، 73671، 73672، 73673، 73669، 73674، 73675، 73676، 73677، 73688، 73689، 73680، 73681، 73683، 73682، 73684، 73685، 73687، 73689، 73690، ان نمبروں سمیت دیگر ایسے ہزاروں انتقالات میں جوکہ ریکارڈ سے غائب ہو چکے ہیں مگراشتمال کے اعلیٰ افسروں ریونیو سٹاف کی اس انتہائی سنگین غلطی پر ٹس سے مس نہیں ہورہے ہیں۔ شہریوں نے ڈی جی اینٹی کرپشن پنجاب سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -