اسمبلیوں کی مدت میں توسیع کی گئی تو نہیں چلنے دیں گے،چودھری نثار

اسمبلیوں کی مدت میں توسیع کی گئی تو نہیں چلنے دیں گے،چودھری نثار

اسلام آباد(ثناءنیوز ) قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف چودھری نثارعلی خان نے کہا ہے کہ دائیں بازو کی جماعتوں کے ووٹ تقسیم ہوں یا نہ ہو عمران خان ہر صورت آصف علی زرداری کو واپس لانے کی کوشش کررہے ہیں ۔اسمبلیوںکی مدت میںایک سال کی توسیع کی گئی تو ایسی اسمبلیوں کو نہیں چلنے دیںگے۔ سڑکوں پر ہوںگے۔ حکومت نے چیف الیکشن کمشنر کے لیے فخر الدین جی ابراہیم کا نام نکلوانے کی کوشش کی تھی ہم نے حکومت سے مشاورت سے انکار کردیا تھا۔ منگل کو پارلیمینٹ ہاﺅس میں میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے چودھری نثارعلی خان نے کہا کہ ملک میں اہم سلگتے مسائل کے حوالے سے اپوزیشن کا اہم کردار ہے۔ زرداری کے بیان نے صرف حیران نہیں بلکہ پریشان کردیا ۔ کیونکہ کسی بھی حاکم وقت میں نااہلی ناقص کارکردگی بدعنوانی ہو تویقینا یہ بہت بڑی خامیاں ہیں مگر عوامی معاملات سے اس میں بے خبری اور لاتعلقی کو اگر شامل کر لیا جائے تویہ بہت بڑا جرم ہے ۔آصف علی زرداری کے بیان سے لگتا ہے کہ وہ ملکی حالات سے مکمل طور پر بے خبر نابلد اور لاتعلق ہیں۔ مجھے ایسا لگتا ہے کہ وہ کسی اور ملک میں رہتے ہیں ۔ قائد حزب اختلاف نے کہا کہ زرداری کی خواہش شاید ایک ذریعے سے پوری ہو اگر عمران خان اسی انداز سے مسلم لیگ (ن) کو تنقید کا نشانہ بنائے جائیں اور زرداری حکومت کی مجرمانہ غفلتوں پر خاموش رہیں یہ بڑی ستم ظریفی ہے کہ اپنے آپ کو ایک اپوزیشن جماعت کہنے والی پارٹی اپنی تمام تر توجہ اور تنقید اور کیچڑ پاکستان کی سب سے بڑی اپوزیشن جماعت پر اچھالتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں اپنے اثاثوں کے بارے میں طعنہ دینے والے پہلے اپنے اثاثوں کی تو قوم کے سامنے وضاحت کردیں ۔ آج تک یہ وضاحت نہیں ہو سکی کہ ان کے اربوں روپے کا گھر ان کی بیوی کے پیسوں سے آیا ان کی غیر ملکی فلیٹ کی فروخت سے آیا یاشوکت خانم کے زکوة کے پیسے سے آیا ۔ قوم صرف یہ جاننا چاہتی ہے کہ ایسا شخص جس کا سرے سے کوئی ذریعہ معاش نہیں ہے وہ پورے پاکستان میںکروڑوں روپے خرچ کرکے باقاعدہ پارٹی چلا رہا ہے ۔ اس بارے میں پہلے بھی سپریم کورٹ میں جانے کی پیشکش کر چکے ہیں۔

مزید : صفحہ اول