رمضان میں بھی لوڈشیڈنگ کا"شیطان "بند نہ ہوا ،روزہ دار سڑکوں پر،راستے بندکردیے

رمضان میں بھی لوڈشیڈنگ کا"شیطان "بند نہ ہوا ،روزہ دار سڑکوں پر،راستے بندکردیے
رمضان میں بھی لوڈشیڈنگ کا

  


اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) لوڈشیڈنگ کم کرنے کے حکومتی دعوے دھرے کے دھرے رہ گئے ہیں اور رمضان میں بھی لوڈشیڈنگ کا شیطان بند نہ ہو سکا، بجلی کے عذاب میں مبتلاءروزہ دار سڑکوں پر نکل آئے ہیں ۔جنہوں نے بدھ کے روز بھی ملک بھر میں مظاہرے کیے۔ بھوانہ میں لوڈ شیڈنگ کے خلاف احتجاجی مظاہرہ ہوا اور مظاہرہین نے چنیوٹ روڈ بلاک کردی ۔ کوہاٹ کے باچاخان چوک میں لوڈ شیڈنگ کے خلاف احتجاجی مظاہرہ ہوا جس میں ضلع بھر سے مظاہرین نے شرکت کی اور ٹائر جلاکر ہنگوروڈ بلاک کردی ۔لاہور میں بند روڈ پر میاں منشی ہسپتال کے قریب شہری سڑک پر نکل آئے اور بند روڈ بلاک کردی ۔روزہ دار مظاہرین کاکہناتھاکہ تین دن سے اُن کے ہاں پانی اور بجلی کی قلت ہے اورا نہوں نے وفاقی حکومت کے خلاف نعرہ بازی کی ۔پشاور میں مظاہرین اور پیسکو حکام کے درمیان مذاکرات ناکام ہوگئے اور اُنہوں نے ترناب کے مقام پر سڑک بلاک کردی اور ارمڑ کے لائن سپریٹنڈنٹ ٹمین جان کے تبادلے کا مطالبہ کیا۔حافظ آباد میں آج شٹرڈاﺅن ہڑتال کی گئی اور مظاہرین نے ڈاکخانے پر دھاوا بول کر شیشے توڑ دیئے ۔ حملے میں تین ملازم زخمی بھی ہوئے ۔لیہ میںکروڑ لعل عیسن کے کاظمی چوک پر مظاہرین نے توانائی بحران کے خلاف احتجاج کیااور بھکر روڈ بلاک کردی ۔ اٹک میں مظاہرین نے بسال روڈ بلاک کردی ۔

مزید : اسلام آباد /اہم خبریں