قائمہ کمیٹی نے ڈاکٹرعاصم کو تیل کی قیمتوں میں اضافے کاذمہ دار قراردیدیا،پرانے نرخ بحال کرنے کی سفارش

قائمہ کمیٹی نے ڈاکٹرعاصم کو تیل کی قیمتوں میں اضافے کاذمہ دار ...
قائمہ کمیٹی نے ڈاکٹرعاصم کو تیل کی قیمتوں میں اضافے کاذمہ دار قراردیدیا،پرانے نرخ بحال کرنے کی سفارش

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) قائمہ کمیٹی برائے پٹرولیم نے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں حالیہ اضافہ واپس لینے کی سفارش کردی ہے اور جبکہ کمیٹی اراکین نے وزارت پٹرولیم کو ذمہ دار قرار دے دیا۔انجینئر طارق خٹک کی زیرصدارت ہونے والے قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے پٹرولیم کے اجلاس میں نئی کی بجائے پٹرولیم مصنوعات کی سابقہ قیمتیں برقرار رکھنے کی سفارش کی گئی ہے ۔چیئرمین طارق خٹک کاکہناتھاکہ ایک طرف لوڈشیڈنگ، دوسری طرف پٹرولیم قیمتیں بڑھائی جارہی ہیں ۔کمیٹی کے رکن جمشید دستی نے کہاکہ پٹرولیم کی قیمتوں میں اضافے کے ذمہ دارڈاکٹر عاصم ہیں ،سسٹم تباہ ہونے کی ذمہ دار وزارت پٹرولیم اور اُس کا ماتحت عملہ ہے جس پرڈاکٹر عاصم کاکہناتھاکہ تقریراُنہیں بھی آتی ہے ،آپ پڑھے لکھے ہیں ذاتی حملے نہ کریں ۔برجیس طاہر نے کہاکہ وزارت ناکام ہوچکی ، جمشید دستی نے عوامی جذبات کی بات کی ۔وزیرپٹرولیم ڈاکٹر عاصم حسین کا کہناتھاکہ قیمتیں دنیابھر میں بڑھیں ،پٹرولیم لیوی کا تعین وزارت نے نہیں بلکہ پارلیمنٹ نے کیا۔برجیس طاہرنے ڈاکٹر عاصم سے کہاکہ کیاآپ نے قوم کی تذلیل کا ٹھیکہ لے رکھاہے ؟ شیخ آفتاب نے تجویز دی کہ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں پندرہ دن کی بجائے تین ماہ بعد مقررہونی چاہیے ۔قیمتوں کے تعین اور طریقہ کار پر اراکین کمیٹی اور وزارت پٹرولیم کے نمائندوں کے تکرارپرسیکرٹری پٹرولیم کاکہناتھاکہ اراکین کمیٹی کی سفارشات وزیراعظم اور کابینہ کو بھجوادیں گے ۔

مزید :

اسلام آباد -