وزیر داخلہ کا کھلا بیان اور اسلام آباد کے ریسٹ ہاؤس!

وزیر داخلہ کا کھلا بیان اور اسلام آباد کے ریسٹ ہاؤس!

  

وزیر داخلہ نے قومی اسمبلی میں اسلام آباد سے مذموم کاروبار میں ملوث غیر ملکی خواتین کی گرفتاری کے حوالے سے بڑا سخت بیان دیا اور یہ حوصلہ افزا اطلاع بھی دی ہے کہ اسلام آباد کو گناہوں کے اِس کاروبار سے پاک کر دیا گیا ہے۔حالیہ دِنوں میں اسلام آباد کے متعدد ریسٹ ہاؤسوں اور گھروں پر چھاپے مار کر ایک سو سے زائد غیر ملکی خواتین اور بعض مردوں کو گرفتار کیا گیا، خواتین کا زیادہ تر تعلق وسطی ایشیائی ریاستوں سے ہے، ان کو واپس بھجوایا جائے گا۔ اسلام آباد کے حوالے سے یہ شہرت پرانی تھی اور کسی بے خبری کا عالم نہیں تھا، لیکن کارروائی نہیں ہوئی تھی ، اب وزیر داخلہ کے بیان سے واضح ہوا کہ ایسا کیوں نہیں ہوتا تھا۔وزیر داخلہ نے کہا کہ اس کاروبار کو کئی غیر ملکی سفارت کار بھی تحفظ دیتے اور ہمارے اپنے بااثر حضرات بھی ملوث ہیں۔ اگر ایوان کہے تو وہ نام بھی بتانے کو تیار ہیں۔ اسلام آباد کو اس گناہ سے پاک کرنے کی مہم بہت اچھی ہے اور وزیر داخلہ مبارک باد کے مستحق ہیں کہ انہوں نے یہ قدم اٹھایا اس عمل کو مضبوط کرنے کی ضرورت ہے کہ یہ کارروائی وقتی ثابت نہ ہو۔ اگر بااثر لوگ سرپرست ہیں تو یہ مذموم دھندا پھر سے کسی اور انداز میں شروع ہو سکتا ہے۔

مزید :

اداریہ -