حقانی گروپ کے سابق سربراہ مولانا جلال الدین ایک سال قبل انتقال کر چکے،طالبان کی تصدیق

حقانی گروپ کے سابق سربراہ مولانا جلال الدین ایک سال قبل انتقال کر ...

کابل (آن لائن228اے این این) حقانی نیٹ ورک کے سربراہ جلال الدین حقانی کا بھی ایک سال قبل انتقال ہوجانے کی اطلاعات سامنے آگئیں، افغان علاقے میں سپرد خاک کیا گیا۔ میڈیارپورٹ میں طالبان ذرائع کے حوالے سے بتایا گیا ہے کہ حقانی نیٹ ورک کے سربراہ جلال الدین حقانی بھی ایک سال قبل وفات پا چکے ہیں۔ جلال الدین حقانی طالبان کے موجودہ سیٹ اپ میں آپریشنل کمانڈر سراج الدین حقانی کے والد تھے۔ سراج الدین حقانی بھی امریکا کو انتہائی مطلوب افراد کی فہرست میں شامل ہیں۔ سراج الدین حقانی کے سر کی قیمت دس ملین ڈالرز مقرر کی گئی ہے۔طالبان ذرائع کے مطابق جلال الدین حقانی کے دس بیٹوں میں سے تین ڈرون حملوں میں جاں بحق ہو چکے ہیں۔ جلال الدین حقانی کے ایک بیٹے نصیرالدین حقانی کو اسلام آباد میں نامعلوم افراد نے فائرنگ کرکے قتل کیا تھا۔ نصیرالدین حقانی ذبیح اللہ مجاہد کے نام سے طالبان ترجمان کے طور پر کام کرتے تھے۔ جلال الدین حقانی کا ایک بیٹا انس حقانی افغانستان میں اتحادی افواج کی زیر حراست ہے۔ جلال الدین حقانی کی دو بیوہ ہیں جن میں سے ایک بیوہ کا تعلق افغانستان جبکہ دوسری کا تعلق یمن سے ہے۔ جلال الدین حقانی افغان جہاد کے دوران اہم جنگجو کمانڈر رہے۔ حقانی گروپ کے سابق سربراہ امریکا کو انتہائی مطلوب کمانڈروں میں شامل تھے۔

مزید : صفحہ اول