ایف آ ئی اے صرف وفاق کے زیر انتظام محکموں میں کاروائی کر سکتی ہے ،ایف آئی اے اور سندھ حکومت میں ٹھن گئی

ایف آ ئی اے صرف وفاق کے زیر انتظام محکموں میں کاروائی کر سکتی ہے ،ایف آئی اے ...

  

کراچی(خصوصی رپورٹ)زمینوں کے ریکارڈ پر ایف آئی اے اور حکومت سندھ میں ٹھن گئی ہے۔ ایف آئی اے نے 24جولائی کو کراچی میں چھاپا مارکر زمینوں کا ریکارڈ قبضے میں لیا تھا۔ اب صوبائی حکومت نے ایف آئی اے کا دائرہ اختیار چیلنج کردیا ہے۔ سندھ کے ڈپٹی سیکریٹری بلدیات نے ایک خط میں کہا ہے کہ ایف آئی اے صرف وفاقی حکومت اور وفاق کے زیر انتظام محکموں میں کارروائی کرسکتی ہے، ایف آئی اے ایکٹ 1974ء کے تحت صوبائی محکموں میں کارروائی نہیں کرسکتی۔ خط میں کہا گہا ہے کہ لینڈ ڈیپارٹمنٹ کا ضبط کیا گیا ریکارڈ 3 دن میں واپس کیا جائے، رکارڈ واپس نہ کر نے کی صورت میں مقدمہ کرنے کی دھمکی دی گئی ہے۔ اس کے جواب میں ایف آئی اے نے سندھ حکومت کا موقف مسترد کردیا ہے۔ ایف آئی اے ترجمان نے ایک بیان میں کہا ہے کہ کے ایم سی لینڈ ڈیپارٹمنٹ پر چھاپا قانون کے مطابق مارا گیا، ایف آئی اے چائنا کٹنگ اور زمینوں کی غیر قانونی خرید و فروخت کی تحقیقات کررہی ہے، ایف آئی اے کو دہشت گردوں کی مالی معاونت کی تحقیقات کا حق حاصل ہے۔

مزید :

صفحہ اول -