ریکارڈ میں ردو بدل ،زائد از حصہ کی فردیں،سائل سراپا ء احتجاج

ریکارڈ میں ردو بدل ،زائد از حصہ کی فردیں،سائل سراپا ء احتجاج

لاہور(اپنے نمائندے سے)محکمہ ریونیو کے پٹوار سرکل چندرائے کا عارضی چارج سنبھالنے والے ایڈیشنل پٹواری نے اپنی تعیناتی کے دوران ریکارڈ میں ردوبدل کرتے ہوئے سینکڑوں ایسے انتقالات کا اندراج کر دیا جو کہ ریکارڈ سے مطابقت نہ رکھتے ہیں ،زائد از حصہ کی فردات کی تیاری کی مد میں بھی لاکھوں روپے وصول کر لئے ،جبکہ پرچہ رجسٹری قانون کی دھجیاں بکھیر کر رکھ دی گئیں ،پٹوار سرکل میں آنے والے شہریوں سے فی انتقال 3000 سے 5000روپے تک رشوت وصولی کا سلسلہ بھی جاری ہے ،شہریوں کی کثیر تعداد نے اسسٹنٹ کمشنر ماڈل ٹاؤن کی جانب سے مانیٹرنگ کے غیر فعال انتظامات ہونے کے باعث سراپا احتجاج بن گئی،ڈائریکٹر اینٹی کرپشن اور ڈی سی او لاہور سے فوری نوٹس لینے کی اپیل کی گئی ہے ،روزنامہ پاکستان کی جانب سے کئے جانے والے سروے کے دوران تحصیل ماڈل ٹاؤن کی حدود میں آنے والے چندرائے کے رہائشیوں ارسلان ڈوگر،عمر علی،جہانگیر شہزاد ،خرم شہزاد نے آگاہی دی دیتے ہوئے الزام عائد کیا ہے کہ چندرائے پٹوارخانے میں تعینات ایڈیشنل پٹواری مشتاق احمد جو کہ ڈھائی سال سے زائد عرصہ گزرجانے کے باوجود پٹوارخانے پر تاحال مسلط ہے نے 2ماہ سے فل چارج لینے کیے بعد ریکارڈ میں ردوبدل کرتے ہوئے جعلی اور جلے ہوئے ریکارڈ کی تیارکی جانے والی متعدد ایسی رجسٹریوں کا اندراج کر دیا ہے جو کہ ریکارڈ کے مطابق بالکل مطابقت نہ رکھتی ہے جبکہ فرضی حوالہ جات کے ذریعے جعلساز اور لینڈ مافیا کے متعدد افراد کو ریونیو ریکارڈ میں مالک ظاہر کر دیا گیا ہے مذکورہ پٹواری مشتاق احمدنے پرچہ رجسٹری قانون کے مطابق ایک انتقال بھی درج نہیں کیا بلکہ اشٹام فروش اور جائیداد کے مالکان سے منہ مانگی رشوت وصول کرتا رہا ہے ،شہری جہانگیر شہزاد،خواجہ توقیر،فاضل خان اور آصف راجہ کا کہنا تھا کہ مذکورہ پٹواری نے اپنے پرائیویٹ عملے کے ہمراہ مل کر رجسٹری انتقال کے عوض 3000سے 5000ہزار روپے رشوت وصولی کی ہے اسسٹنٹ کمشنر آفس کی عدم توجہ اور عدم دستیابی کے باعث تحصیل ماڈل ٹاؤن میں کرپشن عروج پر پہنچ چکی ہے شہر ی نوید اقبال ،تنویر،اور اکرام اللہ باجوہ نے الزام عائد کیا ہے کہ مذکورہ پٹواری کی 2ماہ کی تعیناتی کے دوران ریونیو ریکارڈ میں اندراج کئے جانے والے انتقالات کی سپیشل بستہ پڑتال کروائی جائے تو بڑے پیمانے پر ریکارڈ میں کی جانے والی ٹمپرنگ اور بے ضابطگیاں عیاں ہو جائیں گیں شہریوں نے اس ضمن میں گزشتہ روز ماڈل ٹاؤن کچہری میں اسسٹنٹ کمشنر آفس کے باہر احتجاج بھی کیا ہے اور اعلی افسران سے نوٹس لینے کی اپیل کی ہے پٹواری نے کہا کہ تمام الزامات بے بنیاد ہیں

مزید : میٹروپولیٹن 1