پنجاب انسٹی ٹیو ٹ آ ف لینگوئج آرٹ کے تحت خصوصی لیکچر

پنجاب انسٹی ٹیو ٹ آ ف لینگوئج آرٹ کے تحت خصوصی لیکچر

لاہور(فلم رپورٹر)پنجاب انسٹیٹیوٹ آف لینگوئج آرٹ اینڈ کلچر (پِلاک) کے تحت ’’پنجابی زبان دے فروغ لئی پرنٹ میڈیا دا کردار‘‘ کے موضوع پر ایک لیکچر کا اہتمام کیا گیا۔ جس میں معروف کالم نگار، دانشور ، شاعر اور نوائے وقت کے ایڈیٹر سعید آسی نے حاضرین سے اس موضوع پر خطاب کیا۔ جو بعد میں سوال و جواب کی نشست کی صورت اختیار کر گیا۔ ادارے کی ڈائریکٹر ڈاکٹر صغرا صدف نے اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پنجاب انسٹیٹیوٹ مستقبل میں بھی ایسے لیکچروں کا اہتمام کرتا رہے گا تاکہ پنجابی زبان کے حوالے سے ایک بھرپور مکالمے کا سلسلہ چلتا رہے۔ سعید آسی نے اپنی گفتگو میں اِس بات پر زور دیا کہ مختلف پنجابی لہجوں کو رسم الخط کا حصّہ کیسے بنایا جاسکتا ہے اور سب سے بڑی ضرورت پرنٹ میڈیا کے ساتھ ساتھ ہم سب کا خود پنجابی زبان سے محبت کرنا اور خود پر پنجابی زبان کے نفاذ کا اطلاق انتہائی ضروری ہے۔ زاہد حسن، ویر سپاہی، ڈاکٹر غافر شہزاد، صوفیہ بیدار، ڈاکٹر شاہدہ دلاور شاہ، یوسف پنجابی، آغا باقر، عتیق انور راجا اور خاقان حیدر غازی نے موضوعِ بحث گفتگو میں بھرپور شمولیت اختیار کی اور آخر پر ڈاکٹر صغرا صدف نے آنے والے مہمانوں کا شکریہ ادا کیا۔

مزید : میٹروپولیٹن 1