اعلیٰ پولیس افسران نے کروڑوں روپے اخراجات کی مد میں کرپشن کی نذر کر دیئے

اعلیٰ پولیس افسران نے کروڑوں روپے اخراجات کی مد میں کرپشن کی نذر کر دیئے

لاہور (ارشد محمود گھمن)صوبائی دارالحکومت پنجاب پولیس ہیڈ کوارٹر کے اعلیٰ افسران نے کروڑوں روپے مختلف اخراجات کی مد میں کرپشن کی نذر کر لیے۔یہ فنڈز پنجاب پولیس کے ملازمین کو ٹی اے ڈی اے اور گاڑیوں کی ریپئرنگ ،فرنیچر ،سٹیشنری اور دیگر اخراجات کیلئے استعمال کیے جا تے ہیں جبکہ پولیس اہلکارعوام کی جیبوں سے اپنے اخراجات پورے کرنے لگے۔اینٹی کرپشن اسٹیبلشمنٹ لاہور ریجن اپنے پیٹی بھائیوں کے خلاف کرپشن اور فنڈز کے خوردبرد ہونے پر کوئی کاروائی نہ کر سکے۔ایسی درخواستوں کو ردی کی ٹوکری کی زینت بنا دیا جاتا ہے۔تفصیلات کے مطابق باوثوق ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ پنجاب حکومت نے پنجاب پولیس کے عملہ کیلئے تنخواہوں ودیگر مراعات کی مد میں پنجاب پولیس ہیڈکوارٹر کو کروڑوں روپے سالانہ فراہم کرتی ہے۔جس میں ٹی اے ڈی اے ،گاڑیوں کی ریپئرنگ و مینٹینس،آفس فرنیچر،سٹیشنری ،بلڈنگز و دیگر آلات و متعلقہ ضروری اخراجات پر کروڑوں روپے خرچ کیے جاتے ہیں۔مگر اعلیٰ افسران ماتحت عملہ کو ایسے فنڈز سے محروم کر کے خود اپنی نذر کر لیتے ہیں۔ ذرائع نے بتایا کہ پنجاب پولیس صوبائی دارالحکومت ،تھانہ جات کے ماتحت عملہ جس میں کانسٹیبل سے لے کر ایس ایچ او تک شامل ہیں،کو مقدمات کے اندراج و اخراج کی’’ ضمنیاں‘‘لکھنے کیلئے سٹیشنری فراہم کی جاتی ہے۔اور عدالتوں میں مقدمات کے چالان اور ریکارڈ پیش کرنے کیلئے ٹی اے ڈی اے دیا جا تا ہے۔علاوہ ازیں دوران گشت گاڑیوں کے استعمال کیلئے ڈیزل و پٹرول فراہم کیا جا تا ہے ۔یاد رہے کہ ذرائع کے مطابق صوبائی دارالحکومت میں واقع 84تھانوں کومختلف اخراجات کی مد میں تقریباًدس کروڑ روپے ہیڈ کوارٹر فنڈ سے سالانہ فراہم کیے جاتے ہیں۔ماتحت عملہ کو ایسے اخراجات کو عوام کی جیبوں سے پورے کرنے کیلئے چھوڑ دیا جاتا ہے ۔ذرائع کے مطابق اعلیٰ افسران یہ تمام اخراجات ہیڈکوارٹر فنڈ سے متعلقہ تھانوں کے عملہ کو دینے کی بجائے محض کاغذی اور فرضی بل بنا کر خود استعمال کرنے والے فنڈز بھی سرکاری اخراجات کے فنڈز کے کھاتے میں ڈال کر کروڑوں روپے سالانہ کے حساب سے خوردبرد کر لیتے ہیں۔ذرائع کا مزید کہنا ہے کہ قومی خزانے کو نقصان پہنچانے اور ہیڈکوارٹرز فنڈز میں خوردبرد کرنے کے خلاف کئی ملازمین نے اینٹی کرپشن اسٹیبلشمنٹ لاہور کو کاروائی کیلئے درخواستیں ارسال کیں مگر وہاں پر موجود افسران نے اپنے پیٹی بھائیوں کو بچانے کیلئے ایسی درخواستیں ردی کی ٹوکری کی زینت کر دی ہیں۔ڈی جی اینٹی کرپشن انور رشید کے مطابق ایسی کی جانے والی کرپشن کو جڑ سے اکھاڑنے کیلئے وہ پرعزم ہیں مگر ماتحت عملہ ان کے اس عزم کو ناکام کرنے کیلئے پیش پیش ہے۔

مزید : صفحہ آخر