وزارت مذہبی امور کی بدانتظامی،پاسپورٹوں کی ترسیل میں تاخیر، عازمین حج پریشان

وزارت مذہبی امور کی بدانتظامی،پاسپورٹوں کی ترسیل میں تاخیر، عازمین حج ...

ملتان (سٹی رپورٹر)وزارت مذہبی امور کی بدانتظامی، پاسپورٹوں کی (بقیہ نمبر36صفحہ12پر )

ترسیل میں تاخیر نے حاجی کیمپ انتظامیہ سمیت ملک بھر کے عازمین حج کو پریشانی میں مبتلا کر دیا، سرکاری سکیم کے تحت 1 لاکھ 7 ہزار پاسپورٹوں پر ویزے بروقت نہ لگوائے جا سکے، فلائٹس شیڈول میں تاخیر اور بیشتر عازمین حج کو من پسند فلائٹ دینے کا عمل بھی پاسپورٹ پر ویزے لگنے میں تاخیر کی وجہ بنا۔ تفصیل کے مطابق سرکاری سکیم کے تحت حج آپریشن شروع ہوتے ہیں پاسپورٹوں کی تاخیر کے نئے ایشو نے سر اٹھا لیا ہے، ملک کے کسی بھی کونے سے روانہ ہونے والی حج فلائٹ کے عازمین حج کے پاسپورٹ بغیر پریشان کئے نہیں پہنچ رہے، پاسپورٹ کے حصول کے لئے عازمین حج کو اپنے متعلقہ حاجی کیمپ کے کئی چکر لگانا پڑتے ہیں حتیٰ کہ اپنی حج فلائٹ کے دن بھی عازمین اپنے پاسپورٹ کے لئے پریشان ہوتے ہیں۔ وزارت مذہبی امور کے ذرائع کے مطابق پاسپورٹ کی تاخیر میں بنیادی ذمہ داری وزارت کے آئی ٹی سیل کی بنتی ہے جہاں پاسپورٹ پر بلڈنگ کے اسٹیکر، بار کوڈ، مکتب نمبر لگایا جاتا ہے، پاسپورٹوں کی چھانٹی اور ترتیب میں بدنظمی نے بھی عازمین حج کو پریشانی کا شکار کیا۔ واضح رہے کہ رواں سال سرکاری سکیم کے تحت ملک بھر سے 1 لاکھ 7 ہزار سے زائد عازمین حج فریضہ حج کی ادائیگی کے لئے سعودی عرب روانہ ہو رہے ہیں، ان عازمین کے پاسپورٹ رواں سال 15 مئی تک وزارت مذہبی امور کے پاس جمع کرا دئیے گئے تھے مگر دو ماہ سے زائد کا عرصہ گزر جانے کے باوجود وزارت کے ذمہ داران ان پاسپورٹوں پر بروقت ویزہ نہ لگوا سکے جس کی وجہ سے اب ویزوں کے حصول کے لئے سعودی سفارت خانے میں پاسپورٹوں کی بھر مار ہو چکی ہے جس کا خمیازہ عازمین حج کو بھگتنا پڑ رہا ہے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر