کالے کوٹ کے تقدس پر کوئی دباؤ،دھمکی برداشت نہیں کرینگے،شیر زمان قریشی

کالے کوٹ کے تقدس پر کوئی دباؤ،دھمکی برداشت نہیں کرینگے،شیر زمان قریشی

ملتان (خبر نگار خصوصی)ہائیکورٹ بار کے صدر شیرزمان قریشی نے کہا ہے کہ کالے کوٹ کے تقدس پر کسی دباؤ،جبر یا دھمکی کو برداشت(بقیہ نمبر37صفحہ12پر )

نہیں کرینگے اگر گرفتار بھی کرلیا گیا تو جنوبی پنجاب کی بارز کا ہر وکیل شیر زمان بن کر مقابلہ کرے گا۔یہ بات ہائیکورٹ بار و ڈسٹرکٹ بار کے مشترکہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہی ہے۔ ڈسٹرکٹ بار میں منعقدہ اس اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ہمارے حوصلے بلند ہیں اور توہین عدالت کی کسی کارروائی میں پیش نہیں ہونگے۔ملتان بار کے صدر ایم یوسف زبیر نے کہا کہ جنوبی پنجاب کی تمام بارز شیرزمان کے ساتھ کھڑی ہیں اور سازشی اور سازشی طور پر کئے جانیوالے کسی فیصلے کو قبول نہیں کیا جائے گا۔انہوں نے ہڑتال کے دوران پیش ہونے والے چند ایک وکلا کو سخت وارننگ دیتے ہوئے ڈسپلن کی پابندی کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ کسی بھی مرحلے پر قائم ہونے والی کمیٹی کنونشن کے ذریعے متفقہ فیصلے سے تشکیل آئے گی طے شدہ مینڈیٹ پر ہی عمل کرے گی ۔ممبران پنجاب بار میں ندیم تارڑ نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ معافی مانگی جائے گی نہ ہی قدم پیچھے ہٹیں گے۔چوہدری داؤد احمد وینس نے کہا کہ کوڈ آف کنڈکٹ کی خلاف ورزی بار نہیں بلکہ بنچ کی جانب سی کی گئی ہے صاحبزادہ ندیم فرید نے کہا کہ کسی بٹ یا خان کے مذاکرات کو تسلیم نہیں کرینگے اور توہین عدالت کی کارروائی میں وارنٹ جاری کرنا قابل مذمت ہے۔علاوہ ازیں اجلاس سے سید احمد گیلانی،سید انیس مہدی،رمضان خالد جوئیہ،سید بدر گیلانی،ذوالفقار سدھو،ریاض الحسن گیلانی،حافظ اللہ دتہ کاشف،سلیم خان لودھی،نزاکت بھٹہ،عاصمہ خان،احمد عارف گوندل،چوہدری محمد راشد،نادر سلطان،یوسف بھٹی،احمد خان،سید شاہد حسین،مراد سلیم،ملک بشیر کے علاوہ ممبر پنجاب بار جاوید ہاشمی نے اپنے بیان میں کہا کہ ہر محاذ پر صدر شیر زمان کے ساتھ کھڑے ہونگے تحریک کی کامیابی کیلئے جیلیں بھرنے کو تیار ہیں۔عدلیہ کو انڈسٹریل یونٹ کے طور پر چلایا جارہا ہے۔یہ تحریک منتقی انجام تک جاری رہیے گی۔توہین عدالت کی کارروائی پوری بار کو چیلنج ہے۔اجلاس کے آخر میں متفقہ قرار داد کے ذریعے چیف جسٹس پاکستان سے مطالبہ کیا گیا کہ لاہور بنچ کے خلاف دائر کی گئی پٹیشن چار روز سے رجسٹرار آفس اسلام آباد میں زیر التوا ہے۔جسکو فوری طور پر سماعت کیلئے مقرر کیا جائے۔وکاء نے متفقہ طور پر قرار دیا کہ تحریک کے منطقی انجام تک ملتان بار اب ہائیکورٹ میں مسلسل فل ڈے ہڑتال کا سلسلہ جاری رکھا جائے گا۔اجلاس کے بعد وکلاء نے کچہری چوک تک ریلی نکالی اور نعرے بازی کی۔

شیر زمان قریشی

مزید : ملتان صفحہ آخر