سسرالیوں کے تشدد ‘ مبینہ تیزاب پلانے سے خاتون ہلاک ‘ ورثاء کا احتجاج

سسرالیوں کے تشدد ‘ مبینہ تیزاب پلانے سے خاتون ہلاک ‘ ورثاء کا احتجاج

دنیا پور ‘ بھٹہ پور ‘ سلطان کالونی ( نامہ نگار‘ نمائندہ پاکستان ) سسرالیو ں نے گھریلو جھگڑے پر تشدد کے بعد دو بچو ں کی ما ں کو مبینہ طو پر تیزاب پلا کر ما رڈالا ، مرنے سے قبل خاتون نے ویڈیو ریکارڈنگ میں سسر ، ساس اور دیوروں پر زبردستی تیزاب پلانے کا الزام لگادیا ، ، ملزمان فرار گرفتاری کے لئے (بقیہ نمبر40صفحہ12پر )

چھاپے، پولیس نے چار افراد کے خلاف مقدمہ درج کرلیاٹی ایچ کیو میں ساری رات نعش پڑی رہی اگلے روز کہروڑ پکا ہسپتال میں پوسٹ مارٹم ہو سکا ،ورثاء کا احتجاج تفصیل کے مطابق نواحی چک نمبر 339ڈبلیو بی میں سسرالیو ں نے گھریلو جھگڑے کے بعد مبینہ طورپر دوبچو ں کی ماں آ سیہ بی بی عرف ثناء بی بی کو زبر دستی تیزاب پلا دیا جس سے اس کی حالت غیر ہو گئی اسے فوری طور پر ایک پرائیویٹ ہسپتال لایا گیا جہا ں تشویشناک حالت کے پیش نظر ڈاکٹر وں نے اسے بہاولپور وکٹوریہ ہسپتال لیجانے کا مشورہ دیا خاتون کو بہاول پور لیجایا جا رہا تھا کہ راستے میں اس نے دم توڑ دیا تاہم مرنے سے قبل خاتون نے اپنے ماموں کو ایک وڈیوریکارڈنگ میں کہا کہ اس کے سسر ریاض منج ، ساس نذیراں بی بی اور دیوروں وقاص اور جاوید نے تشدد کے بعد زبردستی تیزاب پلادیا ہے ادھر جب متوفیہ کی نعش ٹی ایچ کیو دنیا پور لایا گیا تو لیڈی ڈاکٹر دستیاب نہ ہونے کی وجہ سے اس کی نعش پوری رات ہسپتال پڑی رہی تاہم اگلے روز کہروڑ پکا ہسپتال میں پوسٹ مارٹم کے بعد اس کی نعش ورثاء کے حوالے کردی گئی ، متوفیہ کے لواحقین نے ٹی ایچ کیو کی انتظامیہ کے عدم تعاون پر احتجاج بھی کیا ، ذرائع کے مطابق متوفیہ کا شوہر شکیل لاہور میں محنت مزدوری کرتا ہے اور گھر آ نے پر اکثر اسے تشدد کا نشانہ بناتا رہتا تھا وقوعہ کے روز متوفیہ موبائل فون پر اپنی والدہ سے بات کررہی تھی تو اس کے سسرال والو ں نے اس پر کسی اور سے بات کرنے کاالزام عائد کرتے ہوئے اس پر تشدد کرنا شروع کردیا تھا ادھر تھانہ سٹی دنیا پور نے متوفیہ کے ماموں طلعت منیر کی رپورٹ پر ملزمان ریاض ، نذیراں بی بی ، وقاص او ر جاوید کے خلاف زیر دفعہ 302/34ت پ مقدمہ درج کرکے تفتیش کا آ غاز کردیا ہے اور ملزمان کی گرفتاری کے لئے چھاپے مارنا شروع کردیے ہیں ۔

تیزاب ‘ خاتون ہلاکت

مزید : ملتان صفحہ آخر