انتخابی نتائج مسترد‘ جی ڈی اے کا سندھ میں دوبارہ انتخابات کا مطالبہ

انتخابی نتائج مسترد‘ جی ڈی اے کا سندھ میں دوبارہ انتخابات کا مطالبہ

کراچی(آن لائن)جی ڈی اے نے سندھ کے انتخابی نتائج کو مسترد کرتے ہوئے دوبارہ الیکشن کا مطالبہ کردیا۔کنگری ہاؤس میں گرینڈ ڈیموکریٹک الائنس جی ڈی اے کے سربراہ پیرپگارا نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ جھگڑا پنجاب کا تھا سندھ کا مینڈیٹ کیوں چرایا گیا ، پہلے ہی کہا تھا کہ سندھ میں سرکاری افسران کے ذریعے دھاندلی کی جائے گی دھاندلی تو بارہ جولائی سے ہی شروع ہوگئی تھی،انتخابی مہم میں پیپلزپارٹی کے امیدوار جہاں جارہے تھے بے عزتی ہورہی تھی پی پی کے کچھ امیدوار تو ریٹائر ہورہے تھے پی پی امیدواروں کو پھر اچانک اتنے ووٹ کیسے مل گیے صرف جی ڈی اے کے ووٹ ہی کیوں مسترد ہوئے کیا جی ڈی اے کے ووٹرز ہی نابینا تھے، انہوں نے کہا کہ کچھ ساتھیوں کی رائے تھی کہ ہڑتال کی کال دی جائے ہم قانونی راستہ اختیار کرینگے،ہم عمران خان کی حکومت میں رکاوٹ نہیں چاہیں گے قوم نے عمران خان پر بھروسہ یقین رکھا ہے، اگر عمران خان اپنی باتوں کے پچاس فیصد عمل کرتا ہے تو ملک سدھر جائیگا۔پیرپگارا نے کہا کہ نوے فیصد بیوروکریٹس کے بیوی بچے دہری شہریت والے ہیں چوری کا پیسہ واپس لانے میں بیوروکریسی رکاوٹ ہے پیرپگارا نے کہا کہ دھاندلی پولنگ سے چار پانچ روز پہلے سے شروع ہوگئی تھی،ہم شکایت کرتے رہے کسی نے نوٹس نہیں لیا،ایم کیوایم نے ہماری مدد کی ہے ہم نے تحریک انصاف کے دیہی سندھ میں امیدواروں کو پولنگ ایجنٹس فراہم کیے ہم نے تحریک انصاف کی حمایت کی ہے سب کو پتہ ہے کہ مصطفی کمال کو کون لایااپنا ذاتی مفاد بعد میں پہلے ملکی ایجنڈا اور مفاد ہے پارلیمنٹ میں نہ جائیں تو ذاتی ایجنڈا ہوگااس موقع پر قومی عوامی تحریک کے صدر ایازلطیف پلیجو نے کہا کہ دوہزار اٹھارہ الیکشن میں بہت بڑا فراڈ کیا گیا جی ڈی اے نے سندھ میں دوبارہ الیکشن کا مطالبہ کردیا ہے جی ڈی اے چیف الیکشن کمشنر کے استعفے کامطالبہ کرتا ہے جی ڈی اے نے سندھ کے انتخابی نتائج کو مسترد کردیا ہے انہوں نے کہا کہ جی ڈی اے کو ووٹ دینے پر سندھ کے لوگوں کے شکرگزارہیں فارم 45 فراہم نہیں کئے گئے تھر کی تاریخ میں 73فیصد ووٹ دیئے ہمارے امیدواروں کو کاسٹ شدہ ووٹوں کی تعداد نہیں بتائی جارہی، جلال محمود شاہ،غلام مرتضی جتوئی،صدرالدین شاہ اورغوث علی شاہ جیت گئے تھے، ارباب رحیم،ذوالفقار مرزا،پیرصدرالدین کو ہرایا گیا سندھ کے لوگوں کا مینڈیٹ چھینا گیاانتہائی مشکل حالات میں امیدوار ثابت رہے، ایاز لطیف پلیجو نے کہا کہ انتخابی دھاندلیوں کے خلاف تین اگسٹ کو ہرضلع میں احتجاج ہوگا، دوسرے مرحلے میں انتخابی دھاندلی کے خلاف پہیہ جام ہڑتال ہوگی، تیسرے مرحلے میں سندھ کی تمام شاہراہوں کو بلاک کردینگے حالات کو ستر کی دہائی کی طرف لے جایاجارہاہے، تین اگسٹ کو نماز جمع کے بعد پریس کلبز کے باہر مظاہرے کئے جائینگے۔

مزید : علاقائی