نواز شریف کی صحت تسلی بخش قرا ر، پمز ہسپتال سے اڈیالہ جیل منتقل

نواز شریف کی صحت تسلی بخش قرا ر، پمز ہسپتال سے اڈیالہ جیل منتقل

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک،آن لائن) پمز ہسپتال کے میڈیکل بورڈ نے نواز شریف کی میڈیکل رپورٹ جاری کر دی جس میں میاں نوازشریف کی صحت تسلی بخش قرار دی گئی، ڈاکٹروں کی ہدایت کے برعکس نواز شریف کو ان کی خواہش پر دوبارہ اڈیالہ جیل منتقل کیاگیا۔تفصیلات کے مطابق پمز ہسپتال کے میڈیکل بورڈ نے اڈیالہ جیل منتقلی سے قبل سابق وزیراعظم کا تفصیلی طبی معائنہ کیا،میڈیکل بورڈ نے نصف گھنٹے سے زائدوقت بلڈ پریشر،شوگر،نبض اور دل کی دھڑکن کا معائنہ کیا ،میڈیکل بورڈ نے سابق وزیراعظم کو ایکو کارڈیو گرام،الٹرا ساؤنڈ ٹیسٹ بھی تجویز کئے جبکہ بورڈ نے سابق وزیر اعظم کے دائیں پاؤں کی ایڑھی کی سوجن کا معائنہ بھی کیا،ڈاکٹروں نے نواز شریف کو کمرے میں چہل قدمی کی ہدایت کی۔میاں نواز شریف کو پمزکے کارڈیک سینٹر کے عقبی راستے سے واپس روانہ کیا گیااس موقع پرغیر معمولی حفاظتی انتظامات کئے گئے تھے۔دوسری جانب سابق وزیراعظم کی عیادت کیلئے صدر مملکت ممنون حسین پمز جانے کی تیاریاں کرتے رہ گئے اورنواز شریف کو پہلے ہی اڈیالہ منتقل کر دیا گیا۔میڈیا رپورٹس کے مطابق صدر مملکت ممنون حسین کی متوقع آمد پر سخت سکیورٹی کے اقدامات کر لئے گئے تھے جبکہ صدر مملکت کی نواز شریف سے 20 منٹ کی ملاقا ت طے ہو چکی تھی تا ہم صدر مملکت کی آمد سے قبل ڈاکٹرز کی جانب سے نواز شریف کی صحت تسلی بخش قرار دیے جانے پر انہیں ہسپتال سے دوبارہ جیل منتقل کر دیا ۔

نوازشریف/اڈیالہ منتقل

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) نگران وزیر داخلہ پنجاب شوکت جاوید نے کہا ہے کہ نوازشریف کی میڈیکل رپورٹ میں ایسی تجویز نہیں آئی کہ انہیں علاج کیلئے باہر بھیجا جائے۔لاہور میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے شوکت جاوید نے کہا کہ نواز شریف کو ڈاکٹروں کی ہدایات پرپمز ہسپتال میں رکھا گیا ہے، جب تک ڈاکٹرز کہیں گے نوازشریف ہسپتال میں رہیں گے۔انہوں نے کہا کہ نواز شریف نے ہسپتال جانے میں ہچکچاہٹ کا مظاہرہ کیا جبکہ پاکستان میں ہر طرح کا علاج موجود ہے، پاکستان میں دل کے امراض کا بھی بہت اچھا علاج ہوتا ہے۔نگران وزیر داخلہ نے مزید کہاکہ نواز شریف کی رپورٹیں بہتر ہیں اور مرض کی ہسٹری بنوانا آج کل کوئی مشکل کام نہیں۔

نگران وزیر داخلہ پنجاب

مزید : صفحہ اول


loading...