سرکاری گھرو ں کو کرایے پر یا رشتے داروں کو دینے والوں کیخلاف کارروائی کا فیصلہ

سرکاری گھرو ں کو کرایے پر یا رشتے داروں کو دینے والوں کیخلاف کارروائی کا ...

لاہور(رپورٹ : یو نس با ٹھ )نگران حکومت نے صوبے میں سرکاری گھروں کو کرایہ پر دینے یا اپنے رشتے داروں کو دینے کے حوالے سے ایک خفیہ رپورٹ کے بعد متعلقہ سرکاری افسران کے خلاف ایکشن لینے کا فیصلہ کیاہے۔ اس ضمن میں نگران وزیر اعلی پنجاب کی ہدایت پر چیف سیکرٹری پنجاب کی نگرانی میں ایک اہم اجلاس بھی ہوا ہے ۔اجلاس میں صوبائی وزیر داخلہ سمیت قانون نافز کر نے والے دیگر اداروں کے اہم افسران بھی شر کت کی جس میں مختلف محکموں کے سیکرٹری صاحبان سے رپورٹس طلب کی گئی ہیں چیف سیکرٹری نے سرکاری افسران کی رہائشگاہوں پر ناجائز قابضین و سرکاری ملازمین کی طرف سے اپنے الاٹ شدہ گھروں کو کرایہ پر دینے کی رپورٹس پر سخت ایکشن لینے کا عندیہ دیا ہے اور ایڈیشنل چیف سیکرٹری کو اس آپر یشن کی نگرانی کا حکم دیتے ہوئے کہا گیا ہے کہ فوری طور پر جی او آر ون، ٹو، تھری، فور، وحدت کالونی، خوش نما فلیٹس، چوبرجی کوارٹرز و دیگر سرکاری رہائش گاہوں والے علاقوں میں آپریشن کرنے سے قبل انھیں یہ گھر خالی کر نے کے نوٹس جاری کریں۔ اس ضمن میں ایڈیشنل چیف سیکرٹری کو 7 روز کا وقت دیا گیا ہے کہ وہ ان ایام میں ایسے گھروں کو فوری خالی کروا کر اصل مالکان کے حوالے کر نے کی رپورٹ مر تب کر یں گے ا ور ایسے ملازمین جنہوں نے اپنے گھر کرایہ پر دئیے ہوئے ہیں، انکی الاٹمنٹ منسوخ کر کے کسی اور افسر یا ملازم کو گھر الاٹ کئے جائیں۔

سرکاری گھر

مزید : صفحہ آخر


loading...