میونسپل کارپوریشن ملتان،رات کی تاریکی میں بجٹ اجلاس،ڈپٹی کمشنر کا نوٹس ،کارروائی روکنے کا حکم

میونسپل کارپوریشن ملتان،رات کی تاریکی میں بجٹ اجلاس،ڈپٹی کمشنر کا نوٹس ...

ملتان (سٹاف رپورٹر) ڈپٹی کمشنر ملتان مدثر ریاض نے میونسپل کارپوریشن کے کل ہونے والے بجٹ اجلاس کی تمام کارروائی پر عملدرآمد روکتے ہوئے چیف آفیسر میونسپل کارپوریشن کو طلب کرلیا ہے ۔ڈپٹی کمشنر نے چیف آفیسر کوحکم جاری کیا ہے کہ آئندہ احکامات تک میونسپل کارپوریشن کا بجٹ(بقیہ نمبر40صفحہ12پر )

خرچ نہ کیا جائے اور تمام قانونی تقاضے پورے کرنے کے بعد آئندہ اجلاس بلایا جائے ۔اس سلسلے میں میونسپل کارپوریشن میں ملتان ڈویلپمنٹ گروپ کے وفد‘ اپوزیشن لیڈر عدنان ڈوگر نے ڈپٹی کمشنر مدثر ریاض سے ملاقات کی اور انہیں بتایا کہ میونسپل کارپویشن کے بجٹ اجلاس میں ملتان ڈویلپمنٹ گروپ اور پی ٹی آئی کے چیئرمینوں کو نہیں بلایا گیا ۔قریبی ساتھیوں کو بلا کر بجٹ پاس کرایا گیا۔اس پر ڈپٹی کمشنر نے کل ہونے والے اجلا س کی کارروائی پر عملدرآمد روکتے ہوئے چیف آفیسر میونسپل کارپوریشن کو طلب کرلیا ہے۔میئرمیونسپل کارپوریشن ملتان نے بجٹ پاس کرانے کے لئے رات کی تاریکی میں بجٹ اجلاس بلا کر 2 ارب 21 کروڑ 54 لاکھ روپے کا بجٹ منظور کرا لیا ۔ مئیر گروپ نے اجلاس میں 50 ممبران کی شمولیت کا دعویٰ کیا جبکہ اپوزیشن اور ملتان ڈویلپمنٹ گروپ نے بجٹ اجلاس کو غیر آئینی اور غیر قانونی قرار دیتے ہوئے مسترد کردیا ۔ ایم ۔ میونسپل کارپوریشن اجلاس کی صدارت ڈپٹی مئیر سعید انصاری نے کی۔ اجلاس میں اخراجات کا تخمینہ 2 ارب 11کروڑ لگایا ہے۔ ایم سی ایم کے پاس 9کروڑ روپے سال کے اختتام پر بچا ئے گئے تھے۔ اجلاس میں رانا سجاد نے میئر اور ڈپٹی میئرز پر اعتماد کی قرارداد پیش کی جسے چیئر مینوں نے منظور کر لیا۔ مئیر گروپ نے اجلاس خفیہ رکھنے کیلئے صرف اپنے گروپ کے ممبران کو خاموشی سے میونسپل کارپوریشن آفس میں منعقدہ اجلاس میں بلایا اور اپوزیشن اور ملتان ڈویلپمنٹ گروپ کے چیئر مینوں کو بجٹ اجلاس کی اطلاع نہ دی۔ اجلاس میں چوہدری نوید الحق ارائیں، راؤ مظہر السلام، چوہدری قیصر گجر، اکبر علی انصاری ، شیخ ندیم اکبر ، اسلم ہمایوں ،محمود احمد قریشی، حامد ارائیں امجد انصاری، شیخ عمران ارشد ، طاہر عباس اعوان ، رانا نعیم ، یوسف رونگھا،رانا سجاد، رانا اشرف تاج، اظہر چوغطہ، لطیف میتلا، قسور بھٹی، زاہد بشیر قریشی، شبیر انصاری، لیاقت علی، واصف بٹ،افتخار جاوید، چوہدری غلام سرور ، رانا افضل، زاہد عدنان گڈو، عاصمہ اسحاق، ثروت خان، فرزانہ کوثر ، حنا شاہد ،نرگس مجید، ودیگر نے شرکت کی جبکہ دوسری طرف ایم ڈی جی گروپ نے مقامی ہوٹل میں اجلاس بلایا جس کی صدارت اپوزیشن لیڈر ملک عدنان ڈوگر نے کی۔ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے ملک عدنان ڈوگر ، جلیل خان بابر ، اختر عالم قریشی، ماسٹر سعید انصاری ، اعجاز رجوانہ، اعجاز فخز، رانا امجد، رسالت خان شیر وانی، ضرار خان، شیخ رفیق، زاہد خان ، رانا جہانزیب، قربان فاطمہ، روبینہ شاہین اور دیگر چیئر مینوں نے میونسپل کارپوریشن میں اپوزیشن کو اطلاع دئیے بغیر منعقدہ بجٹ اجلاس کوغیر آئینی اور غیر قانونی قرار دیتے ہوئے مسترد کردیا ہے۔ اجلاس میں مقررین نے بجٹ اجلاس مسترد کرتے ہو ئے کمشنر و ڈپٹی کمشنر ملتان سے مطالبہ کیا ہے کہ 40 ممبران کے ساتھ خفیہ اجلاس کیا گیا ہے جو کہ غیر آئینی ہے۔ غیر قانونی اجلاس کا نوٹس لے کر کارروائی کی جائے۔ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے جلیل خان بابر نے کہا ہے کہ مئیر نے عدم اعتماد سے بچنے کیلیے رات کی تاریکی میں اجلاس بلایا ہے جو کہ غیر قانونی ہے۔اجلاس غیر قانونی اور غیر آ ئینی ہے بغیر ایجنڈا جاری کئے اجلاس نہیں ہو سکتا ہے۔ملتان ڈویلپمنٹ گروپ نے رات کی تاریکی میں منعقد ہونے والے میونسپل کارپوریشن کے بجٹ اجلاس کے خلاف عدلیہ سے رجوع کرنے کا عندیہ دے دیا ہے۔ ملتا ن ڈویلپمنٹ گروپ کے مطابق یہ صورتحال ناقابل برداشت ہے جس کے خلاف ہر فورم سے رجوع کیا جائے گا ۔جبکہ ملتان ڈویلپمنٹ گروپ کے رہنما چیئرمین جلیل خان بابر نے کہاہے کہ میئر نوید ارائیں نے اپنے حواری چیئرمینز کو اپنے میئر آفس میں بلا کر ایک میٹنگ کی جس کو بعد میں بجٹ اجلاس کا نام دیا گیا اور چیئرمینز سے حاضری شیٹ پر دستخط کرائے گئے کسی قسم کا کوئی اجلاس ایم سی ایم بلایا ہی نہیں گیا۔ ممبران کی اکثریت کو علم ہی نہ ہے کہ کوئی اجلاس ہوا ہے یا نہیں۔ بلدیاتی آرڈیننس کے مطابق کوئی بھی اجلاس بلانے کے لئے کم از کم دو دن قبل تمام ممبران ایم سی ایم کو تحریری اطلاع اور ایجنڈا کی کاپی دی جاتی ہے۔ بجٹ اجلاس کے ایجنڈا میں بجٹ کی کاپی لف ہوتی ہے جس کو منظور کروانا ہوتا ہے اس بجٹ پر بحث ہوتی ہے اس کے بعد بجٹ منظور ہوتا ہے لیکن ایسا کچھ بھی نہیں ہوا، بجٹ اجلاس میں میئر یا سیکرٹری کو تمام ممبران کو بجٹ پڑھ کر سناتا ہے۔ 30 جولائی کی شب میئر آفس میں ہونے والا اجلاس فرضی اور جعلی ہے۔علاوہ ازیں ملتان ڈویلپمنٹ گروپ نے سابق وزیر عبدالوحید ارائیں پر بھتہ خوری کا الزام عائد کر دیا۔ ملتان ڈویلپمنٹ گروپ کے چیئرمینز نے الزام عائد کیا ہے کہ ملتان شہر میں قائم مویشی منڈیاں، نقشہ برانچز میں اربوں روپے کے حساب سے وحید آرائیں اور اس کے دست راست اربوں کا بھتہ وصول کر رہے ہیں۔ ہر چیئرمین کی یو سی سے سینٹری ورکروں کو نکال کر کے اپنے میرج ہالز میں ڈیوٹی کروا رہے ہیں ۔ میڈیا سے گفتگو میں ملتان ڈویلپمنٹ گروپ کے چیئرمینوں نے کہا کہ ڈی سی نے تمام معاملات سن کر اجلاس کو کالعدم قرار دیتے ہوئے چیف آفیسر میونسپل کارپوریشن چوہدری محمد افضل کو اپنے آفس بلایا اور سیکرٹری لوکل گورنمنٹ کو لیٹر جاری کیا جس میں میئر ملتان کی جانب سے گزشتہ روز ہونے والے بجٹ اجلاس کو ختم کر کے نئے اجلاس کے متعلق آگاہ کیا گیا۔اس موقع پرشوکت مسیح، چوہدری جہانزیب، رانا محمد عارف ودیگر شریک تھے۔ اس موقع پر ڈویلپمنٹ گروپ کے چیئرمینز ملک عدنان ڈوگر، اختر عالم قریشی، میاں فیاض احمد، جلیل خان بابر، زاہد اقبال خان، ماسٹر سعید انصاری، محمد عمران رشید، محمد عاصم کالروموجود تھے۔

کارروائی کا حکم

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...