وائس چانسلر ز کریا یونیورسٹی پر اسرار طور پر بے ہوش

وائس چانسلر ز کریا یونیورسٹی پر اسرار طور پر بے ہوش

ملتان(خصوصی رپورٹر‘وقائع نگار)زکریا یونیورسٹی کے وائس چانسلرکو پراسرار بے ہوشی ، دروازہ توڑ کر باہر نکالا گیا ، معدہ واش کر نے کے 7گھنٹے کے بعد حالت سنبھل گئی, تفصیل کے مطابق زکریا یونیورسٹی کے وائس چا نسلرپروفیسر ڈاکٹر طاہر امین کو گزشتہ روز بے ہوشی کی حالت میں نشتر ایمرجنسی لایا گیا ڈاکٹر وں کے مطابق پہلے ا نہیں یونیورسٹی کا عام پروفیسر ظاہر کیا گیا مگر بعد میں اعلیٰ افسر کی نقل و حرکت پر معلوم ہوا کہ وائس چانسلر زکریا یونیورسٹی ہیں جس پر ان کا خصوصی علاج شروع کیا گیا ان کو معدہ واش کرکے ان کو آئی سی یو میں شفٹ کردیا گیاہے ، نشتر کے اے ایس ایم ڈاکٹر امجد چانڈیو کا کہناتھا کہ ڈاکٹر طاہر امین نے خواب آور گولیاں زیادہ مقدار میں کھالی ہیں جس پر ان کا معدہ واش کیا گیا، بعد ازاں شام 7بجے وائس چانسلر کو ہوش آگیا دوسری طرف یونیورسٹی ذرائع کے مطابق وائس چانسلر معمول کے مطابق دفتر نہ پہنچے تو ان کے پی ایس طاہر گھر آئے تو دروازے کا کمرہ لاک تھا جس پر تالا توڑ کران کو باہر نکالا گیا اور نشتر منتقل کیا گیا ، وائس چانسلر 14 دن کے بعد یونیورسٹی آئے تھے ذرائع کا دعویٰ ہے کہ ڈاکٹر طاہر امین پر نیب میں چلنے والی انکوائریوں، کے علاوہ یونیورسٹی کے چند پروفیسروں کادباؤ تھا جو اپنے من پسند فیصلے کرانا چاہتے ہیں جو وائس چانسلر نہیں کرنا چاہتے جبکہ یونیورسٹی ترجمان کا کہنا ہے کہ وائس چانسلر بہاء الدین زکریا ملتان پروفیسر ڈاکٹر طاہر امین کو میڈیسن کے ری ایکشن کے ہسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔ وائس چانسلر دل کی تکلیف کی دوائی کھا رہے ہیں جو ری ایکشن کر گئی۔کارڈیالوجی ہسپتال میں ان کی طبیعت اب خطرے سے باہر ہے اور وہ جلد گھر منتقل ہو جائیں گے۔ ڈاکٹروں نے انہیں کچھ دن آرام کرنے کا مشورہ دیا ہے۔دریں اثنابہاوالدین زکریا یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر طاہر امین کے طبیعت خراب ہونے پر نشترہسپتال داخل کروادیاگیا اور مرض کی تشخص کیلئے خون اور پیشاب کے نمونے حاصل کرکے لیبارٹری بھجھوادیئے گئے ہیں اس بارے میں معلوم ہوا ہے کہ بہاؤالدین زکریا یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر طاہر امین کوگزشتہ روز طبیعت خراب ہونے پر نشتر ہسپتال لایا گیا جہاں سب سے پہلے انکو ابتدائی طور پر ایمر جنسی میں طبی سہولیات فراہم کی گئی اور معدہ واش کیا اور وہاں سے ان کے خون اور پیشاب کے نمونے لیکر لیبارٹری تجزئے کیلئے بھیجوادیئے گئے ہیں جس سے یہ معلوم کرنے کوشش کی جارہی ہے کہ ان کے معدہ میں کوئی زہریلی چیز تونہیں ہے۔ حالت تشویش ناک اور بے ہوش ہونے کی وجہ سے آئی سی یو میں منتقل کردیا۔ ذرائع کے مطابق بی زیڈ یو کے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر طاہر امین گزشتہ روز ہوش میں آگئے تھے اور وہ دوستوں وعزیزواقارب سے باتیں بھی کررہے ہیں تاہم خون کے نمونے کے رزلٹ کرنے کے بعد مرض کے بارے حتمی رائے دی جائے گی۔

طاہر امین

مزید : کراچی صفحہ اول