کیا نواز شریف کی واقعی ہارٹ سرجری ہوئی تھی ؟ پمز میں معائنے کے دوران بلا آخر اصل حقیقت سامنے آ گئی

کیا نواز شریف کی واقعی ہارٹ سرجری ہوئی تھی ؟ پمز میں معائنے کے دوران بلا آخر ...
کیا نواز شریف کی واقعی ہارٹ سرجری ہوئی تھی ؟ پمز میں معائنے کے دوران بلا آخر اصل حقیقت سامنے آ گئی

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن )سابق وزیراعظم نوازشریف کی دو دن قبل اڈیالہ جیل میں شدید طبیعت ناساز ہو گئی جس کے باعث انہیں پمز ہسپتال منتقل کیا گیا جہاں صحت بہتر ہونے پر نوازشریف نے فوری جیل واپس منتقل کرنے پر اصرار کیا جس کے بعد گزشتہ روز انہیں واپس منتقل کر دیا گیا تاہم اب نوازشریف کی میڈیکل رپورٹ منظر عام پر آ گئی ہے جس میں وہ حقیقت کھل کر سامنے آ گئی ہے جسے بہت سے لوگ ڈرامہ قرار دے رہے تھے تاہم اب ان کیلئے یہ لمحہ تشویش ہے ۔

تفصیلا ت کے مطابق جنگ اور دی نیوز کے صحافی وسیم عباسی نے سابق وزیراعظم نوازشریف کی میڈیکل رپورٹ جاری کرتے ہوئے کہاہے کہ ” نوازشریف کی میڈیکل رپورٹ میں جس کے مطابق ان کے سینے اور بائیں ٹانگ پر ہارٹ سرجری کے نشانات ہیں ، رپورٹ کے مطابق نوازشریف کا اصرار تھا کہ انہیں واپس جیل بھیجا جائے ۔

وسیم عباسی کی ٹویٹ کو ری ٹویٹ کرتے ہوئے صحافی مرتضیٰ سولنگی کا کہناتھا کہ ” ہمارے اپنے ان اینکرز کو یاد کریں جو کہ کہتے تھے کہ نوازشریف نے ہارٹ سرجری کبھی کروائی ہی نہیں یہ ملک میں جاری حالات سے بھاگنے کیلئے ایک ڈرامہ تھا ، اب وقت ہے ان کے نام سامنے لائیں جائیں اور انہیں شرمندہ کیا جائے ۔

واضح رہے کہ نوازشریف مئی 2016 میں لندن سے اوپن ہارٹ سرجری کروائی تھی جس کے بعد مریم نواز نے ان کی تصویر بھی جاری کی تھی ۔

مزید : قومی