نئے صدرکے انتخاب کی سمری چیف الیکشن کمشنر کو بھیج دی گئی، صدر ممنون کی آئینی مدت 8ستمبر کو پوری ہوجائے گی

نئے صدرکے انتخاب کی سمری چیف الیکشن کمشنر کو بھیج دی گئی، صدر ممنون کی آئینی ...
نئے صدرکے انتخاب کی سمری چیف الیکشن کمشنر کو بھیج دی گئی، صدر ممنون کی آئینی مدت 8ستمبر کو پوری ہوجائے گی

  

اسلام آباد (صباح نیوز) آئین کے تحت نئے صدر کے انتخاب کی سمری تیار کر لی گئی، صدارتی انتخاب کا شیڈول آئندہ ہفتے اراکین قومی و صوبائی اسمبلی کے حلف کے بعد جاری کئے جانے کا امکان ہے۔ صدر کا انتخاب آئندہ ماہ اگست کے اواخر یا ستمبر کے پہلے ہفتے میں متوقع ہے موجودہ صدر ممنون حسین کی آئینی مدت 8ستمبر کو پوری ہو جائے گی اور نئے صدر کا حلف 9ستمبر کو ہو گا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق صدارتی انتخاب کیلئے سمری تیار کر کے چیف الیکشن کمشنر کو بھیج دیا گیا ہے۔ نومنتخب اراکین قومی صوبائی اسمبلیوں کے حلف کے بعد صدارتی انتخاب کا شیڈول جاری کر دیا جائے گا۔ ارکان کے حلف سے صدارتی انتخاب کا الیکٹرول کالج مکمل ہو جائے گا صدر کے انتخاب میں پار لیمنٹ کے دونوں ایوانوں اور صوبائی اسمبلیوں کے ارکان ووٹ ڈالیں گے۔ صدر وفاق کی علامت ہوتا ہے۔ اس لئے چاروں صوبائی اسمبلیوں کے ارکان کے ووٹوں کی حیثیت مساوی ہے یعنی صوبائی اسمبلی کے کسی الیکٹرول کالج میں ارکان کی زیادہ تعداد صدارتی انتخاب پر اثرانداز نہیں ہو سکتی، چاروں صوبائی اسمبلیوں کے ووٹ یکساں ہیں اور بلوچستان کے ارکان کے تناسب سے پنجاب، سندھ اور خیبرپختونخوا اسمبلیوں میں ووٹوں کی تعداد کا تعین کیا جاتا ہے جبکہ سینیٹ اور قومی اسمبلی میں صدارتی انتخاب کے لئے ہر رکن کا ایک ووٹ شمار ہوتا ہے۔

مزید : علاقائی /اسلام آباد