آسمان سے گرنے والے شہاب ثاقب کا معائنہ، سائنسدانوں کو اس کے اندر ایسی چیز مل گئی کہ ہر کوئی حیران پریشان رہ گیا

آسمان سے گرنے والے شہاب ثاقب کا معائنہ، سائنسدانوں کو اس کے اندر ایسی چیز مل ...
آسمان سے گرنے والے شہاب ثاقب کا معائنہ، سائنسدانوں کو اس کے اندر ایسی چیز مل گئی کہ ہر کوئی حیران پریشان رہ گیا

  


ماسکو(نیوز ڈیسک)ہم سب جانتے ہیں کہ دنیا میں کو ئی بھی چیز ہیرے سے بڑھ کر سخت نہیں ہوتی لیکن روس کے برف زار سائبیریا میں سائنسدانوں کو خلاءسے آنے والی ایک ایسی شے مل گئی ہے جس کے سامنے ہیرے کی سختی بھی ماند پڑ گئی ہے۔

”ڈیلی سٹار“ سے کے مطابق روس کے برف سے ڈھکے علاقے سائبیریا میں دو سال قبل سونا تلاش کرنے والی ایک ٹیم کو عجیب و غریب پتھر کا ٹکڑا ملا تھا۔ سائنسدانوں نے اس پر تحقیق کی تو پتا چلا کہ یہ خلا سے گرنے والا شہاب ثاقب ہے، لیکن اصل حیران کن چیز تو اس کے اندر چھپی تھی۔

حال ہی میں یہ انکشاف سامنے آیا ہے کہ شہاب ثاقب کے ٹکڑے کے اندر ایک معدنیات چھپی ہے جس کی سختی ہیرے سے بھی کہیں زیادہ ہے۔ سائنسدانوں نے اس معدنیات کو ”یواکی ٹائٹ“ کا نام دیا ہے۔ روسی اکیڈمی آف سائنس کے ذیلی ادارے انسٹیٹیوٹ آف آسٹرانومی کے سربراہ بورش شستوف کا کہناتھا کہ ”خلاءکی وسعتوں میں ماحول ہماری زمین کے ماحول سے بالکل مختلف ہے اور وہاں اس قسم کی معدنیات بھی وجود میں آرہی ہیں جن کا کرہ ارض پر کوئی تصورنہیں پایا جاتا۔ کبھی کبھار زمین پر گرنے والے شہاب ثاقب کے ذریعے یہ انوکھی معدنیات ہم تک پہنچ جاتی ہیں۔ یواکی ٹائٹ بھی ایک ایسی ہی منفرد معدنیات ہے جو سائبیریا میں گرنے والے شہاب ثاقب کے ٹکڑے کے اندر محفوظ تھی۔ یہ معدنیات زردی مائل شفاف رنگ کی ہے اور کیمیائی اعتبار سے دھاتی خصوصیات کی حامل ہے۔“

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...