50لاکھ گھر بنایا آسان نہیں مگر معیشت کے لئے یہ منصوبہ اہم: وزیر اعظم

    50لاکھ گھر بنایا آسان نہیں مگر معیشت کے لئے یہ منصوبہ اہم: وزیر اعظم

  

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر، مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں) وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے پچاس لاکھ گھر بنانا آسان کام نہیں تاہم معیشت کو چلانے کیلئے یہ اہم منصوبہ ہے، گز شتہ حکومتوں نے بہت لوٹ مار کی،50لاکھ گھروں کا منصوبہ گوادر کے مچھیروں سے شروع کریں گے، لوگوں کی اکثریت پیسے نہ ہونے کی وجہ سے اپنے گھر نہیں بنا سکتی، چیف جسٹس سے درخواست ہے گھروں سے متعلق فوری کیس لگوائیں اور جو کیس 8،9 ماہ سے لٹکا ہے اسے سنیں۔بدھ کو اسلام آباد میں نیا پاکستان ہاؤسنگ پروگرام سے متعلق مفاہمت کی یادداشت پر دستخط کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا ماضی کی لوٹ مار کی وجہ ملکی خزانے میں پیسے نہیں،وزیراعظم عمران خان نے کہا ملک میں اسوقت سوا کروڑ گھروں کی قلت ہے، نیا پاکستان ہاؤسنگ سکیم کا مقصد ون ونڈو آپریشن ہے، ہاؤسنگ سکیم کیلئے مقامی وسائل استعمال ہوں گے، دنیا کی نسبت پاکستان میں بینک سب سے کم گھروں کیلئے پیسہ دیتے ہیں، ان لوگوں کو گھر بنانے کا موقع دیں گے جن کے پاس وسائل نہیں، گھروں کیلئے لوگوں کو آسان قسطوں پر پیسے دیں گے اور سود کم رکھیں گے، عدالت کی طرف سے اجازت کے بعد بینک قرضے دینا شروع کریں گے، کم تنخواہ دار طبقے کیلئے گھر بنانا آسان ہوجائے گا، معیشت کو چلانے کیلئے بھی یہ اہم منصوبہ ہے جبکہ کوئی بھی بڑا کام آسان نہیں ہوتا اور 50لاکھ گھر بنانا بھی آسان کام نہیں،مفاہمتی یادداشت سے ہاؤسنگ منصوبے کیلئے مالی معاونت فراہم ہوگی، پاکستان میں اکثر لوگ اپنا گھر نہیں بنا سکتے۔قبل ازیں وزیر اعظم عمران خان سے اقوام متحدہ کے ریزیڈنٹ ایڈیٹر نیل بوہن نے ملا قات کی جس میں ملک میں گڈ گورننس، تعلیم و صحت اور یوتھ کے شعبوں میں اقوام متحدہ کے کردار پر بات چیت کی گئی۔ بدھ کے روز وزیراعظم عمران خان سے اقوام متحدہ کے ریزیڈنٹ ایڈیٹر نیل بوہن نے وز یر اوعظم ہاؤس میں ملاقات ہوئی جس میں وزیر اعظم کو اقوام متحدہ کی جانب سے مختلف حکومتی شعبوں میں تعاون پر بریفنگ دی گئی۔ملاقات کے دوران ملک میں گڈ گورننس، تعلیم و صحت اور یوتھ کے شعبوں میں اقوام متحدہ کے کردار پر بات چیت کی گئی۔ ریزیڈنٹ ایڈیٹر نے حکومت کی جانب سے گڈ گورننس کیلئے اقدامات کی تعریف کرتے ہو ئے کہنا تھا ماضی کی حکومتوں میں بہت سے اقدامات کو نظر انداز کیا جاتا رہا، موجودہ حکومت کی اسٹنٹتھ گروتھ، صحت اور درخت لگانے میں سنجیدگی قابل تعریف ہے۔ ماحولیاتی چیلنج اور غربت کے خاتمے کیلئے منصوبہ بندی بہترین ہے۔ و ز یر اعظم عمران خان نے بھی حکومتی ترجیحات سے متعلق نیل بوہن کو آگاہ کر تے ہو ئے کہا حکومت بچوں کی گروتھ پر خصوصی توجہ دے رہی ہے، انضمام شدہ قبائلی علاقوں میں ترقیاتی کام موجودہ حکومت کی ترجیح ہے اوران کیلئے فنڈز کا اجرا کیا ہے۔وزیر اعظم نے احساس پروگرام سے بھی نیل بوہن کو آگاہ کیا، انہوں نے پروگرام میں اقوام متحدہ کے تعاون کو سراہا۔ ملک میں پولیو کے خاتمے سے متعلق اقدامات بھی ملاقات میں زیر بحث آئے، وزیر اعظم نے بلین ٹری سونامی پراجیکٹ سے بھی نیل بوہن کو آگاہ کیا، اس موقع پر وزیر اعظم نے مزید کہا 10 ار ب درخت لگنے سے ماحولیاتی تبدیلی پر مثبت اثرات پڑیں گے۔نیل بوہن نے اقوام متحدہ کے تمام اداروں کی جانب سے مکمل تعاون کا یقین دلایا۔ بعدازاں چیئرمین بورڈ آف ڈائریکٹر یوٹیلیٹی سٹور ز کارپوریشن ذوالقرنین علی خان نے وزیر اعظم عمران خان سے خصوصی ملاقات کی جس میں یوٹیلیٹی سٹورز کارپوریشن کے موجودہ حالات، مسائل اور نئی انتظامیہ کی طرف سے اٹھائے گئے انقلابی اقدامات پر سیر حاصل گفتگو ہوئی، وزیر اعظم عمران خان نے یوٹیلیٹی سٹورز کارپور یشن کے حکام پر زور دیا کہ وہ کارپوریشن کو عالمی معیار کا ادارہ بنانے کیساتھ ساتھ عوام کو معیار ی اشیائے صرف مارکیٹ سے کم قیمت پر فراہم کرنے کیلئے بھرپور اقدامات کریں جبکہ وزیر اعظم نے ادارے کو عالمی معیا ر کے مطابق ریٹیل ادارہ بنانے کے عزم کا بھی اظہار کیااورکہا ہم یوٹیلیٹی سٹورز کو پاکستان کا ایک بہترین ادارہ بنائینگے جس کیلئے پروفیشنل لوگوں کی خدما ت لی جائینگی ہم ایک بہترین ٹریننگ انسٹیٹیوٹ قائم کرینگے جس میں ملازمین کو عالمی معیار کے مطابق اور جدید تقاضوں سے ہم آہنگ کرنے کی خصوصی ٹریننگ دی جائیگی اس ٹریننگ سے ادارے کے نوجوان ملازمین سب سے زیادہ مستفید ہونگے وہ ادارے کیلئے بہتر کردار اد کرینگے اور انکی پرفارمنس میں میں بہتری آئیگی۔

وزیر اعظم

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر، مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں) وزیراعظم عمران خان اور ابوظہبی کے ولی عہد شیخ محمد بن زید النیہان میں ٹیلی فونک رابطہ ہوا جس میں دونوں رہنماؤں کے مابین دو طرفہ تعلقات اور علاقائی صورتحال پر تبادلہ خیال ہوا۔تفصیلات کے مطابق وزیر اعظم عمران خان نے ابوظہبی کے ولی عہد سے گزشتہ روزٹیلی فونک رابطہ کیا اور کہا پاکستان اور یو اے ای کے درمیان تعاون انتہائی اہمیت کا حامل ہے، پاکستان یو اے ای کیساتھ مستحکم تعلقات کو اہمیت دیتاہے، وزیراعظم نے 700 پا کستانی قیدیوں کی رہائی اور ایف اے ٹی ایف میں حمایت پر ابوظہبی کے ولی عہد شیخ محمد بن زید النیہان کا شکریہ ادا کیا اور تعاون جاری رکھنے کی امید ظاہر کی۔ اس موقع پر دونوں رہنماؤں نے دوطرفہ تعلقات کومزید فروغ دینے کیلئے تعاون جاری رکھنے پر زور دیااور علاقائی اورکثیر الجہتی معاملات پر قریبی مشاورت جاری رکھنے پربھی اتفاق کیا جبکہ عمران خا ن نے متحدہ عرب امارات کیساتھ تعلقا ت کو مزید آگے بڑھانے کے عزم کا اعادہ کیا۔ دونوں رہنماوں کے درمیان ٹیلی فونک گفتگو کافی دیر تک جاری رہی۔

عمران ٹیلی فون

مزید :

صفحہ اول -