اسلام آباد ، شہریو ں کو پلاسٹک بیگ کی بجائے کپڑے اور پیپربیگ استعمال کرنے کی تجویز

اسلام آباد ، شہریو ں کو پلاسٹک بیگ کی بجائے کپڑے اور پیپربیگ استعمال کرنے کی ...

  

اسلام آباد( آن لائن،این این آئی ) وفاقی حکومت نے اسلام آباد میں پلاسٹک بیگ کے استعمال پر پابندی کے بعد اس کا متبادل پیش کر دیا ہے۔اس سلسلے میں وزارت موسمیاتی تبدیلی نے شہریوں کو کپڑے اور پیپرماشی بیگز استعمال کرنے کی تجویز دی ہے جبکہ وزارت نے بطور نمونہ چار مختلف اقسام کے بیگ تیار کر لیے ہیں۔موسمیاتی تبدیلی کی وزارت نے شہریوں کو ہدایت کی ہے کہ ماحول دوست بائیو ڈی گریڈیبل شاپرز کا استعمال کریں۔واضح رہے کہ وفاقی دارالحکومت میں 14 اگست سے پلاسٹک شاپرز کے استعمال پر پابندی عائد ہو جائے گی، اس تاریخ کے بعد پلاسٹک شاپرز استعمال کرنے والوں پر بھاری جرمانہ عائد کیا جائے گا۔حکومت نے وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں 14 اگست 2019 سے پلاسٹک بیگ کے استعمال پر پابندی عائد کرنے کا فیصلہ رواں سال 17 مئی کو کیا تھا۔مزید براںوزیر مملکت موسمیاتی تبدیلی زرتاج گل نے کہا ہے کہ پلاسٹک مضر صحت ہونے کے ساتھ ساتھ آلودگی کا باعث بنتے ہیں، اس پر مکمل پابندی لگائی جا رہی ہے، پلاسٹک بیگ کے متبادل بیگ بھی متعارف کرائے جائیں گے، 15 اگست کے بعد عمل درآمد نا کرنے کی صورت میں بھاری جرمانے عائد کئے جائینگے۔گزشتہ روز پلاسٹک بیگ سے آزادی سے متعلق آگاہی مہم کا آغاز کر دیا گیا اس سلسلے میں ایک تقریب منعقد ہوئی جس میں وزیر مملکت موسمیاتی تبدیلی زرتاج گل اور این ایچ اے حکام شریک ہوئے پلاسٹک بیگ سے آزادی مہم، وزارت مواصلات اور وزارت موسمیاتی تبدیلی کا مشترکہ اقدام ہے۔ وزیرمملکت موسمیاتی تبدیلی زرتاج گل نے کہاکہ وزارت مواصلات اور این ایچ اے کی بہت شکر گزار ہوں،اپنی شاہراہ سے متعلق این ایچ اے کے ساتھ کام کر رہے ہیں۔ انہوںنے کہاکہ شاہراہوں کے دونوں اطراف درخت لگانے کی مہم چلا رہے ہیں،ملتان اور ساہیوال موٹروے کے دونوں اطراف پر اپنی شاہراہ کے تحت درخت لگائے جا رہے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ پلاسٹک پالوشن بھی وزارت موسمیاتی تبدیلی کے دائر کار میں آتا ہے،پلاسٹک بیگ کو مکمل طور پر پابندی لگانے جا رہے ہیں۔انہوںنے کہاکہ پلاسٹک بیگ آلودگی کا بہت بڑا ذریعہ بن رہے ہیںلوگ اپنے علاقے چھوڑ کر شہری علاقوں کا رخ تیزی سے کر رہے ہیں۔ انہوںنے کہاکہ شہری علاقے پلاننگ نا ہونے کی وجہ سے بہت زیادہ متاثر ہو رہے ہیں،شہر میں سیلابی صورتحال اس پلاسٹک بیگ کی وجہ سے پیدا ہوتی ہے۔انہوںنے کہاکہ پولیتھین لفافہ مضر صحت ہے،وزارت کے پاس پیسے نہیں ہیں تاہم وژن اور لوگوں کی مدد حاصل ہے۔

پلاسٹک بیگ

مزید :

صفحہ آخر -