خواجہ سراﺅں کی جانب سے ہسپتالوں میں الگ وارڈز کے قیام کا خیر مقدم

خواجہ سراﺅں کی جانب سے ہسپتالوں میں الگ وارڈز کے قیام کا خیر مقدم

  

پشاور(سٹی رپورٹر)خوا جہ سراﺅں کے حقوق کےلئے کام کرنے والی سما جی تنظیم نے محکمہ صحت کی طرف سے جاری مراسلے کا خیر مقدم کیا ہے جسمیں خواجہ سراﺅں کےلئے سوبہ بھر میں الگ وارڈز کے احکامات جاری کئے ہے اور وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا کا شکریہ ادا کیا ہے کہ اسمبلی سے ایسے قوانین بنائے گئے ہے کہ جس سے خواجہ سراہوں کو رلیف ملے کا جو انکادیرانہ مطالبہ ہے ۔گزشتہ روز پشاور پریس کلب میںبلو وینز اور خواجہ سراﺅںکی صوبائی اتحاد ٹرانس ایکشن کی جانب سے اظہار تشکر کے حولاے سے پریس کانفرنس کا انعقاد کیا گےا تھا جسمیں بلیو وینزکے کوآرڈنیٹر قمر نسیمم ،خواجہ سرا کیمونٹی صوبائی صدر فرزنانہ جان ،ترانس ایکشن کی جنرل سیکرٹری ارزو خان ،تیمور کمال او ر دیگر ساتھیوں نے پریس کانفرنس کررتے ہوئے کہا کہ صوبائی حکومت اور محکمہ صحت کے احکامات کے روشنی میں صوبے بھر کے ایم ٹی آئی ہسپتالوں میں خواجہ سراوں کےلئے پانچ بستر،اے اور بی کٹیگری میں ہسپتالوں میں چار بستر ،سی ہسپتالوں میں تین بستر پر مشتمل وارڈ محتص کرنے کے ہداےات کی گئی ہے جو خوش ائند ہے ۔انہوں نے کہا کہڈاکٹرز کے نصاب میں خواجہ سراﺅں کے صحت کے حوالے سے اور دیگر مشکلات پر بھی کام ہونا چاہئے جس سے خوجہ سراﺅں کو معاشرے میں خوجہ سراﺅں کی شناخت اور حثیت کو تسلیم کرنے میں مدد ملے گی ۔انہوں نے صوبئی حکومت سے مطالبہ کیا ہے لیڈی ریڈنگ ہسپتال میں محتص وارڈ کو علیشاہ میموریل وارڈ کا نام دےا جائے اور خوجہ سراﺅں کو درپیش دیگر مسائل پر بھی عملی اقدامات اٹھائے جائے ۔بعدازاں خوجہ سراﺅں نے صحافیوں اور سول سوسائٹی کے اراکین میں شکریہ کے طور پر مٹھائی بھی تقسیم کی ۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -