وزیراعلیٰ محمودخان کا وزیراعظم کے مشیرارباب شہزاد کے ہمراہ طوخم کادورہ

وزیراعلیٰ محمودخان کا وزیراعظم کے مشیرارباب شہزاد کے ہمراہ طوخم کادورہ

  

ضلع خیبر (بیورورپورٹ) وزیر اعلیٰ خیبر پختونخواہ محمود خان کا دورہ طورخم، وزیر اعظم پاکستان عمران خان کے مشیر ارباب شہزاد، وزیر خزانہ سلیم تیمور جھگڑا بھی ہمراہ تھے، طورخم بارڈرکو چوبیس گھنٹے کھلا رکھنے سے تجارت کو فروغ ملے گا،محمود خان، دو ہفتوں میں طورخم بارڈر کا سوفٹ اوپنگ ہوگا، ارباب شہزاد، FIA ڈیٹا انٹری اپریٹر کے ملازمین کا مستقکل کرنے کیلئے طورخم بارڈر پراحتجاج ہاتھوں پر کالے پٹیاں باندھی تھی،ہمیں مستقل کر کے مشکور فرمایئں، ڈیتا انٹری اپیٹر ملازمین کا مطالبہ وزیر اعلیٰ خیبر پختونخواہ محمود خان نے پاک افغان بارڈر طورخم کا دورہ کیا ، کہاں پر ان کیساتھ وزیر اعظم کے مشیر ارباب شہزاد بھی ہمراہ تھے، وزیر اعلیٰ محمود خان اور ارباب شہزاد کو بارڈر منیجمنٹ فورس اور کسٹم اہلکاروں نے بریفنگ دی، میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ محمود خان کا کہنا تھا کہ وزیر اعظم عمران خان کا طورخم بارڈر چوبیس گھنٹے کھلا رکھنے کا یہ احسن اقدام ہے جس سے دونوں ملکوں کے مابین تجارت کو فروغ ملے گی ، وزیر اعظم کے مشیر ارباب شہزاد کا کہنا تھا کہ بارڈر کو چوبیس کھنٹے کھلا رکھنے کامقصد تجارت کو سنٹرل ایشاء تک وسعت دینا ہے، محمود خان نے پاک افغان بارڈر، کسٹم ہاؤس اور دیگر دفاتر کا معائنہ بھی کیا، ادھر پاک افغان بارڈر پر امیگریشن ڈیٹا انٹی اپریٹر طورخم کے 30ملازمین نے وزیر اعلیٰ محمود خان کے آنے پر طورخم بارڈر پر احتجاج بھی کیا ان کا مطالبہ تھا کہ وہ 2015 سے طورخم بارڈر پروہ: طورخم بارڈر منیجمنٹ سسٹم تھرو ایف آئی اے کے تحت کام کر رہے، لیکن تاحال ان کو مستقل نہیں کیا گیا جبکہ وہ دوسرے جاب کرنے بھی اہل نہ رہے ان کا مطالبہ تھا کہ وہ اپنی ڈیوٹی نہایت خوش اسلوبی کیساتھ اداکر رہے ہیں، انہوں نے اپیل بھی کی انہیں مستقل کیا جائے کیونکہ وہ این ٹی ایس کے تھرو اس پراجیکٹ کے تحت کام کر رہے ہیں جبکہ طورخم بارڈر کو چوبیس گھنٹے کھلا رکھنے سے FIA سٹاف میں اضافے کی بھی ضرورت ہوگی اور وہ لوکل بھی ہے اسلئے ان کو مستقل کر کے مشکور فرمائیں۔

پشاور(سٹاف رپورٹر) وزیر اعلیٰ خیبر پختونحوا محمود خان نے کہا ہے کہ پراونشل ڈیزاسٹرمینجمنٹ اتھارٹی صوبے میں مون سون بارشوں کے تناظر میں ہائی الرٹ پہلے سے جاری کر چکی ہے، صوبائی حکومت صوبائی سطح پر این ڈی ایم اے کیساتھ بھی تعاون یقینی بنائے گی، ہمارا حتمی مقصد کسی بھی ہنگامی صورتحال سے بروقت نمٹنا اور عوام کے جان و املاک کی حفاظت یقینی بنانا ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے نیشنل ڈیزاسٹر منیجمنٹ اتھارٹی کے چیئرمین لیفٹیننٹ جنرل محمد افضل سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ این ڈی ایم اے کے چیئرمین نے وزیراعلیٰ ہاؤس پشاور میں وزیراعلیٰ سے ملاقات کی۔ ملاقات میں صوبے میں مون سون بارشوں سے پیدا ہونے والی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ چیئرمین این ڈی ایم اے نے وزیر اعلیٰ کو بتایا کہ این ڈی ایم اے بلین ٹری شجرکاری مہم میں اپنا بھرپور کردار ادا کرنے کے لئے تیار ہے، ضلع چترال میں شجرکاری مہم پر خصوصی توجہ دی جائیگی۔ شجرکاری مہم سے ضلع چترال میں لینڈ سلائیڈنگ اور سیلابوں کی روک تھام میں مدد ملے گی۔چیئرمین این ڈی ایم اے نے مزید بتایا کہ نیو بالا کوٹ سٹی کے مقررہ وقت میں قیام کو یقینی بنانے کے لئے این ڈی ایم اے خصوصی کردار ادا کرے گی۔ وزیر اعلیٰ نے کہا کہ صوبائی حکومت صوبائی سطح پر این ڈی ایم کے ساتھ سیلابوں اور لینڈ سلائیڈنگ کی روک تھام کے لئے ہر قسم تعاون یقینی بنائے گی۔ جبکہ پی ڈی ایم اے نے صوبائی سطح پر حالیہ مون سون بارشوں سے پیدا ہونے والی صورتحال سے نمٹنے کے لئے پہلے سے الرٹ جاری کر دیا ہے۔

مزید :

صفحہ اول -