پاکستان کے بعد برطانیہ میں بھی والدین نے بچوں کی ویکسی نیشن کرانے سے انکار کردیا، وجہ ایسی کہ آپ کو بھی حیرت ہوگی

پاکستان کے بعد برطانیہ میں بھی والدین نے بچوں کی ویکسی نیشن کرانے سے انکار ...
پاکستان کے بعد برطانیہ میں بھی والدین نے بچوں کی ویکسی نیشن کرانے سے انکار کردیا، وجہ ایسی کہ آپ کو بھی حیرت ہوگی

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان میں پولیو کی ویکسین کے متعلق بھی طرح طرح کی افواہیں گردش میں رہتی ہیں جن کی وجہ سے بعض ماں باپ اپنے بچوں کو پولیو سے بچاﺅ کے قطرے پلانے سے گریز کرتے ہیں۔ اب یہ سلسلہ برطانیہ میں بھی شروع ہو گیا ہے۔

سپوتنک نیوز کے مطابق برطانیہ میں ہر 2سے 10سال عمر کے بچے کو ’نسل فلو‘ (Nasal flu)سے بچاﺅ کی ویکسین دی جاتی ہے تاہم اس بار برطانیہ میں مقیم بیشتر مسلمان خاندانوں نے اس ویکسین کو ’حرام‘ قرار دے کر اسے اپنے بچوں کو پلوانے سے انکار کر دیا ہے۔ برطانوی مسلمانوں کا کہنا ہے کہ یہ ویکسین حرام ہے اور انہوں نے مطالبہ کیا ہے کہ ان کے بچوں کے لیے حلال ویکسین مہیا کی جائے۔

برطانوی اخبار ٹیلی گراف نے اپنی رپورٹ میں کونسل آف برٹین ریسرچ کمیٹی کے چیئرمین شجاع شفیع کا بیان شائع کیا ہے جس میں شجاع شفیع کا کہنا تھا کہ ”ہم نے علماءکرام کے ساتھ مشاورت کی ہے اور انہوں نے اس ویکسین کو حرام قرار دیا ہے۔ چنانچہ ہمیں ایک ایسی ویکسین کی ضرورت ہے جو حلال ہو۔“رپورٹ کے مطابق مسلمانوں کے اس اقدام سے حکومت کے نسل فلو کے خلاف اس ویکسینیشن پروگرام میں کافی حد تک خلل آ رہا ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -