’اپوزیشن حکومت سے ملی ہوئی اور اندر سے ٹوٹی ہوئی ہے‘ آنے والے دنوں میں شہباز شریف اور زرداری کے کیسز کا کیا ہوگا؟ کامران خان کا تہلکہ خیز تجزیہ

’اپوزیشن حکومت سے ملی ہوئی اور اندر سے ٹوٹی ہوئی ہے‘ آنے والے دنوں میں شہباز ...
’اپوزیشن حکومت سے ملی ہوئی اور اندر سے ٹوٹی ہوئی ہے‘ آنے والے دنوں میں شہباز شریف اور زرداری کے کیسز کا کیا ہوگا؟ کامران خان کا تہلکہ خیز تجزیہ

  

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن) سینئر صحافی و اینکر پرسن کامران خان کا کہنا ہے کہ چیئرمین سینیٹ کے خلاف تحریک عدم اعتماد کی ناکامی کے بعد یہ واضح ہوگیا ہے کہ اپوزیشن اندر سے ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہے، یوں لگتا ہے کہ اپوزیشن کی حکومت کے جوڑ توڑ چل رہی ہے۔ آنے والے دنوں میں زرداری اور شہباز شریف کے کیسز میں کیا ہوتا ہے ، یہ دیکھنا دلچسپی کا باعث ہوگا۔

ٹوئٹر پر اپنے تجزیے میں سینئر صحافی کامران خان کا کہنا تھا کہ وزیر اعظم عمران خان کو سینیٹ میں الیکشن 2018 سے زیادہ معنی خیز کامیابی ملی ہے کیونکہ انہوں نے وہ بازی جیتی ہے جو وہ 100 فیصد ہارتے ہوئے نظر آرہے تھے۔ آج عمران خان سیاسی طور پر اتنے مستحکم نہیں جتنے وہ 2018 میں تھے، ان کے امیدوار کا سینیٹ الیکشن میں کامیاب ہونا بہت بامعنی ہے۔

کامران خان نے کہا کہ بظاہر تو اپوزیشن عمران خان کے خلاف اکٹھی ہے لیکن وہ اندر سے اتنی اکٹھی نہیں ہے جتنی باہر سے نظر آتی ہے۔ بظاہر یہی لگ رہا ہے کہ ن لیگ اور پیپلز پارٹی کے ازلی مسائل اپنی جگہ موجود ہیں ، اسی وجہ سے سینیٹ الیکشن میں اپوزیشن اندر سے ٹوٹی ہوئی نظر آئی ۔

انہوں نے کہا کہ چیئرمین سینیٹ کے خلاف تحریک عدم اعتماد کی ناکامی کے بعد یہ واضح ہورہا ہے کہ اپوزیشن کی لیڈر شپ حکومت کے ساتھ کہیں نہ کہیں جوڑ توڑ میں مصروف نظر آتی ہے۔ آنے والے دنوں میں زرداری صاحب کے ساتھ کیا ہوتا ہے، شہباز شریف کے کیسز میں کیا ہوتا ہے ، یہ دیکھنا دلچسپی کا باعث ہوگا۔

سینئر صحافی کا کہنا تھا کہ سینیٹ کی دھماکہ خیز کامیابی سے عمران خان کی سیاست مستحکم ہورہی ہے اور پاکستان میں تسلسل کی فضا بن رہی ہے۔ اس وقت پاکستان کو اہم اور کلیدی عہدوں پر تسلسل کی ضرورت ہے اور یوں لگتا ہے کہ وہ تسلسل آرہا ہے۔

مزید :

علاقائی -سندھ -کراچی -