فٹیف کے نام پر ہونیوالی چوری پکڑی گئی،حکومت کالا قانون مسلط کرنا چاہتی تھی:احسن اقبال

فٹیف کے نام پر ہونیوالی چوری پکڑی گئی،حکومت کالا قانون مسلط کرنا چاہتی ...

  

لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک ) احسن اقبال نے کہا ہے کہ فیٹف کے نام پر ہونے والی چوری پکڑی گئی، حکومت ملک پر کالا قانون مسلط کر رہی تھی، وزیراعظم سے کارکردگی کا پوچھنے پر این آر او کا شور مچانا شروع کر دیتے ہیں۔پاکستان مسلم لیگ نون کے رہنما احسن اقبال نے نیوز کانفرنس کرتے ہوئے کہا حکومت اپوزیشن کی پگڑیاں اچھال کر اپنی کارکردگی پر پردہ نہیں ڈال سکتی، عمران خان نوجوانوں کا نام لے کر ورغلاتے اور مستقبل کا خواب دکھاتے ہیں، 2 سال مکمل ہونے پر عمران خان کی حکومت ہر شعبہ میں پٹ چکی، آج مہنگائی اس سطح پر ہے کہ عام آدمی کی چیخیں نکل گئی ہیں، عوام کو جینے کا حق دو، این آر او نوجوانوں کو دیں جن کا مستقبل تاریک ہوگیا۔احسن اقبال کا کہنا تھا آج تاجر، سرمایہ کار اور مزدور مایوس ہیں، حکومت ایک کالا قانون مسلط کر رہی تھی، اس قانون کے تحت ہر کوئی 6 ماہ کیلئے اندر ہوسکتا تھا، ان کی چوری کو عالمی برادری کے سامنے پیش کریں گے، یہ عوام کو کالے قانون کی رسی میں جکڑنے کا منصوبہ تھا، ہر قانون نواز شریف اور اسحاق ڈار کو سامنے رکھ کر بنایا جاتا ہے، فیٹف قانون میں عوام کے بنیادی حق پر ڈاکا ڈالا جا رہا تھا۔لیگی رہنما نے مزید کہا نیب قوانین بنیادی انسانی حقوق کو سامنے رکھ کر بنائیں جائیں، قوانین یک طرفہ نہیں ہوتے، قانون کے تحت بیرون ملک سے کسی بھی پاکستانی کو واپس مانگا جاسکتا ہے، قانون کے تحت پاکستان بیرون ملک سے شہری واپس مانگ سکے گا، ایسے قانون سے دیگر ممالک بھی اپنا شہری واپس مانگ سکتے ہیں۔

احسن اقبال

مزید :

صفحہ اول -