کورونا اور لاک ڈاؤن کے باعث اجتماعی قربانی کے رجحان میں اضافہ

کورونا اور لاک ڈاؤن کے باعث اجتماعی قربانی کے رجحان میں اضافہ

  

لاہور(فلم رپورٹر)ملک بھر میں کورونا وائرس سے پیدا ہونے والی ابترو مشکل کاروباری صورتحال کے باوجود عیدالاضحی کے سلسلہ میں قربانی کے بکروں، چھتروں، دنبوں کی قیمتیں آسمان سے باتیں کرنے کے باعث بڑی تعداد میں لوگوں نے انفرادی قربانی کی سکت نہ ہونے کے باعث بڑے جانوروں کی اجتماعی قربانی میں حصہ ڈالاہے جس کے باعث آج بڑے جانوروں خصوصاً گائے، بچھڑا، وھیڑا، اونٹ وغیرہ کی قربانی کی شرح گزشتہ سالوں کی نسبت بہت زیادہ ہونے کا امکان ہے،تحریک منہاج القران پاکستان سمیت دنیا بھر میں بلا امتیاز رنگ و نسل، جنس و مذہب شب و روز دکھی انسانیت کی خدمت میں مصروف عمل ہے۔ قربانی کے جانور کے ہر بال کے بدلے ایک ایک نیکی نامہ اعمال میں درج کی جاتی ہے۔منہاج ویلفیئر کے ڈائریکٹر سید امجد علی شاہ نے انتظامی کمیٹیوں کے سربراہان کے ساتھ مرکزی قربان گاہ کا دورہ کیا، انتظامات کا جائزہ لیا اور جانوروں کی دیکھ بھال، سیکیورٹی اور خوراک کے حوالے سے خصوصی ہدایات جاری کیں سید امجد علی شاہ نے کہا کہ قربانی کا گوشت ضرورت مندوں میں تقسیم کرنے کیلئے بڑے پیمانے پر لائحہ عمل تیار کر کے تمام تر انتظامات مکمل کر لئے گئے ہیں۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -