شملہ معاہدے کے حوالے سے مشاورت جاری،ہم جذبات میں کوئی ایسے فیصلے نہیں کررہے کہ۔۔۔۔شہریار آفریدی نے ایسی بات کہہ دی کہ مولانا فضل الرحمان بھی حیران رہ جائیں گے

شملہ معاہدے کے حوالے سے مشاورت جاری،ہم جذبات میں کوئی ایسے فیصلے نہیں کررہے ...
شملہ معاہدے کے حوالے سے مشاورت جاری،ہم جذبات میں کوئی ایسے فیصلے نہیں کررہے کہ۔۔۔۔شہریار آفریدی نے ایسی بات کہہ دی کہ مولانا فضل الرحمان بھی حیران رہ جائیں گے

  

مظفر آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)پاکستان تحریک انصاف کےمرکزی رہنما اور قومی کشمیرکمیٹی کےچیئرمین شہریارآفریدی نےکہاہےکہ بھارتی حکمران کالےقوانین نافذکر رہے ہیں،ہم کشمیرکامقدمہ ہرفورم پرلڑیں گے،کشمیر دو طرفہ مسئلہ نہیں بلکہ اس میں سلامتی کونسل کی قراردادیں موجود ہیں،اقوام متحدہ مسئلہ کشمیرپرآئینی ذمہ داریاں پوری کرنےسےقاصرہے،یہ بین الاقوامی آرمڈ کنفلکٹ ہے، پاکستان کی تمام سیاسی جماعتیں اور ادارے کشمیر کاز پر ایک صحفہ پر ہیں،ہم کشمیر کیلئے ہر قسم کی قربانی کیلئے تیار ہیں،مقبوضہ کشمیر میں عید کی نماز پر پابندی اقوام متحدہ کے چارٹر کی خلاف ورزی ہے۔

نجی ٹی وی کے مطابقمظفرآباد میں حریت کانفرنس کی قیادت سے ملاقات کے بعد وزیراعظم آزاد کشمیر کے ہمراہ مشترکہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے رکن قومی اسمبلی شہریار آفریدی نے کہا کہ وزیر اعظم عمران خان کی ہدایت پر عید کے موقع پر کشمیری عوام سے یکجہتی کا اظہار کرنے یہاں پہنچا ہوں،میرے ہمراہ کشمیر کمیٹی کے اراکین بھی کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کرنے پہنچے ہیں،کشمیر کی آزادی تک کشمیر کا مقدمہ ہر فورم اور ہر میدان میں لڑینگے،دشمن جان لے،کشمیر کاز کیلئے پاکستان کے عوام، سیاسی جماعتیں اور مسلح افواج سمیت تمام سٹیک ہولڈرز متحد، یکسو اور یک جان ہیں،شاطردشمن ہائبرڈوار کےذڑیعے نوجوانوں کو آپس میں لڑارہا ہے.انہوں نے کہا کہ فاشسٹ مودی حکومت جان لے، کشمیریوں کی جدوجہد میں انکے شانہ بشانہ کھڑے ہیں،دفعہ370اور35اےختم کرنے کے بعد ہندوستان غیر آئینی طورپرقابض ہے،کشمیر کی آزادی تک کشمیر کا مقدمہ ہر فورم اور ہر میدان میں لڑینگے،وزیراعظم عمران خان کشمیر کے حقیقی سفیر کی حیثیت سے دنیا بھر میں اہم فورمز پر کشمیر کی آزادی کا مقدمہ لڑرہے ہیں.انہوں نے کہا کہ شملہ معاہدے کے حوالے سے مشاورت جاری ہے،ہم جذبات میں کوئی ایسے فیصلے نہیں کررہے کہ کل آپ کہیں کہ آپ نے کیا کردیا؟مسئلہ کشمیر پر کوئی سمجھوتہ نہیں کریں گے، کشمیر کی آزادی تک کشمیر کا مقدمہ لڑیں گے.

ان کا مزید کہنا تھا کہ کشمیر کاز کیلئے ہم نے کوئی گولڈ میڈل نہیں لینے، نہ کسی کو خوش کرنا ہے،ہم کشمیریوں کے لئےجو کچھ کررہے ہیں آپ پر احسان نہیں کر رہے بلکہ کشمیریوں کا پاکستان پر احسان ہے،ہندوستان ایک تیر سے دس شکار کرتا ہے، وہ ظلم اور بربریت کرتا ہے اور الزام بھی پاکستان پر رکھتا ہے ہم فلموں پر نہیں حقیقی زندگی پر یقین رکھنے والے لوگ ہیں،کشمیر کی آزادی تک کشمیر کا مقدمہ ہر فورم اور ہر میدان میں لڑینگے، دشمن جان لےکشمیر کاز کیلئے پاکستان کے عوام، سیاسی جماعتیں اور مسلح افواج سمیت تمام سٹیک ہولڈرز متحد، یکسو اور یک جان ہیں.

مزید :

قومی -