6سے 8ہفتوں میں عام انتخابات کا اعلان ہو سکتا ہے کارکن، ارکان اسمبلی تیاری کریں: عمران خان 

  6سے 8ہفتوں میں عام انتخابات کا اعلان ہو سکتا ہے کارکن، ارکان اسمبلی تیاری ...

  

        لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں) پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے ارکین اسمبلی کو نئے انتخابات کی تیاری کا ٹاسک دے دیا ہے۔لاہور میں عمران خان نے وزیراعلیٰ ہاؤس میں اراکین اسمبلی سے ملاقات کی، جس کی اندرونی کہانی سامنے ٓگئی ہے۔ عمران خان نے اراکین اسمبلی کو نئے انتخاب کے لیے تیاری کا ٹاسک دیتے ہوئے کہا کہ چھ سے آٹھ ہفتوں میں آئندہ عام انتخابات کا بگل بج سکتا ہے۔پی ٹی آئی چیئرمین نے کہا کہ اراکین اسمبلی اور پارٹی تنظیمیں  انتخابات کی تیاری کریں اور لائحہ عمل تیار کرلیں۔عمران خان نے  ڈاکٹر یاسمین راشد کو دو ہفتوں میں پنجاب میں تنظیم سازی کا عمل مکمل کرنے کا ٹاسک دیتے ہوئے کہا کہ تنظیم سازی مکمل کی جائے تاکہ انتخاب میں بھرپور انداز میں جائیں۔اْن کا کہنا تھا کہ پچیس مئی کو جنہوں نے چادر اور چار دیواری کا تقدس پامال کیا قانون ان کے حوالے سے راستہ اختیار کرے گا، مجھے پتہ ہے جن لوگوں نے ہمارے ساتھ دو نمبر ی کی مگر میں سب کے سامنے کسی کا نام نہیں لینا چاہتا۔عمران خان سے ڈاکٹر ثانیہ نشتر اور سابق صوبائی وزیر ہاشم جوان بخت کی ملاقات ہوئی۔سابق وزیراعظم نے پنجاب میں احساس پروگرام کو تیزی سے آگے بڑھانے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ احساس پروگرام پر عملدرآمد کے لئے ڈاکٹر ثاینہ نشتر کو ذمہ داری دے ہے۔اس موقع پر انہوں نے کہا کہ افسوس کا مقام ہے کہ سابق پنجاب حکومت نے غریب خاندانوں کی مدد کے لئے ہمارے اس شاندار پروگرام کو روکا، سابق پنجاب حکومت نے غریب اور نادار افراد کی فلاح و بہبود کے اس اہم پروگرام کو نظر انداز کیا، احساس پروگرام کو تیزی سے آگے بڑھایا جائے۔سابق وزیراعظم نے مزید کہا کہ اس پروگرام کو ناصرف پاکستان بلکہ بین الاقوامی سطح پر بھی پذیرائی ملی۔ڈاکٹر ثاینہ نشتر نے احساس پروگرام پر عملدرآمد کے حوالے سے عمران خان کو بریفنگ دی۔ عمران خان سے اسپیکر پنجاب اسمبلی سبطین خان نے  بھی ملاقات کی ہے۔ملاقات میں عمران خان نے اسپیکر کا منصب سنبھالنے پر سبطین خان کو مبارکباد دی جس پر سبطین خان نے ذمہ داری کے لئے اعتماد کرنے پر عمران خان کا بے حد شکریہ ادا کیا۔عمران خان سے پارٹی کے وائس چیئرمین شاہ محمود قریشی نے بھی ملاقات کی جس میں ملکی سیاسی صورتحال پر تبادلہ خیال ہوا۔پارٹی کے سینئر رہنما شفقت محمود نے بھی پی ٹی آئی چیئرمین سے ملاقات کی، ملاقات میں شفقت محمود نے سابق حکومت کے انتقامی مقدمات کے بارے میں قائم کمیٹی کی رپورٹ پیش کی۔عمران خان سے آئی جی پنجاب پولیس کی ملاقات بھی ہوئی جس میں صوبے کی امن و امان کی صورتحال پر بات جیت ہوئی۔چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے وزیراعلیٰ پنجاب پرویز الٰہی سے بھی ملاقات کی جس میں صوبائی کابینہ کی تشکیل سمیت اہم امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔چیئرمین تحریک انصاف عمران خان ایک روزہ دورے پر لاہور پہنچے ہیں جہاں انہوں نے ایوان وزیراعلیٰ میں چودھری پرویز الہی سے ملاقات کی۔چیئرمین پاکستان تحریک انصاف عمران خان گزشتہ روز وزیر اعلیٰ آفس پہنچے جہاں پر وزیر اعلیٰ پنجاب چوہدری پرویز الٰہی نے عمران خان کااستقبال کیا وزیر اعلیٰ چوہدری پرویز الٰہی اور سابق وفاقی وزیر مونس الٰہی کی ملاقات  سابق وزیر اعظم سے باہمی دلچسپی کے امور، سیاسی صورتحال اور پنجاب کے انتظامی معاملات پر تبادلہ خیال کیا گیااس کے ساتھ ساتھ صوبے کے عوام کو ریلیف دینے کے اقدامات پر بھی بات چیت ہوئی عمران خان نے پنجاب سے غیر آئینی و غیر قانونی حکومت کے مکمل خاتمے پر چوہدری پرویزالٰہی اور مونس الٰہی کو مبارکباد دی۔وزیر اعلیٰ پنجاب نے سیاسی وفاداریاں بدلنے والوں کے خلاف  بھرپور موقف پر کھڑا رہنے پر عمران خان کی سیاسی بصیرت کو سراہا سابق وزیر اعظم کی پنجاب کے عوام کو ریلیف دینے کیلئے تمام تر کاوشیں بروئے کار لانے کی ہدایت وزیر اعلی چودھری پرویزالٰہی نے سیلاب متاثرین کی مدد کے لئے کئے گئے حکومتی اقدامات سے آگاہ کیا عمران خان کی متاثرہ علاقوں میں امدادی سرگرمیوں کو مزید تیز کرنے کی ہدایت سیلاب متاثرین کی ہرممکن مدد کی جائے اور متاثرین سیلاب کی مدد کے لئے انتظامیہ اور متعلقہ ادارے متحرک رہیں۔چوہدری پرویزالٰہی نے سیلاب کے دوران جاں بحق ہونے والے افراد کے لواحقین کو 8، 8 لاکھ روپے مالی امداد دینے کا اعلان کیا ہے۔چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان سے لاہو ر،گوجرانوالہ، سرگودھا، راولپنڈی، ملتان اور بہاولپور ڈویژن کے ارکان اسمبلی نے ملاقاتیں کیں -ملاقات کرنے والوں میں خواتین اور اقلیتی ایم پی ایز بھی شامل تھے-عمران خان نے الیکشن میں عمدہ کارکردگی پر ارکان اسمبلی کی کاوشوں کو سراہا،چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان نے مختلف ڈویژن کے ارکان اسمبلی سے گفتگو کرتے ہو ئے کہاکہ ملک میں استحکام صاف وشفاف الیکشن سے ہی ممکن ہے-مالیاتی اداروں کا حکومت پر اعتماد ختم ہوچکا ہے، مستحکم جمہوری حکومت آنے تک معاشی بحران نہیں جائے گا- حالات مزید مشکل ہوسکتے ہیں،ہر چیز مزید مہنگی ہونے والی ہے- کرپٹ حکمران آتے ہیں تو ملک نیچے جاتے ہیں -انہوں نے مزید کہاکہ حقیقی سیاست عبادت کے مترادف ہے-یہاں لوگ سیاست میں پیسہ بنانے آتے ہیں،لیکن اب عوامی شعور بیدار ہوچکا ہے- بچوں میں ملکی مسائل کے شعور کی بیداری خوش آئند ہے-قوم کی توقعات اب پی ٹی آئی سے وابستہ ہیں -عمران خان نے کہا کہ اپوزیشن ابھی تک پے درپے شکست کے صدموں سے باہر نہیں آسکی۔ عمران خان نے مزید کہا کہ پنجاب میں مربوط تنظیم سازی پر توجہ دی جائے-ممبرشپ کیلئے وقت موزوں ہے،جنرل الیکشن کو مدنظر رکھ کر تنظیم سازی کی جائے-ملاقات میں ارکان اسمبلی سے خطاب کرتے ہوئے مخدوم شاہ محمود قریشی نے کہاکہ نظریے اور اصول کی سیاست کرنے والے ارکان اور کارکن عزت و تکریم کے مستحق ہیں -

عمران خان

مزید :

صفحہ اول -