وزیر داخلہ پنجاب کے معاملے پر عمران، پرویز الٰہی ملاقات بے نتیجہ رہی

  وزیر داخلہ پنجاب کے معاملے پر عمران، پرویز الٰہی ملاقات بے نتیجہ رہی

  

لاہور (جاوید اقبال) چیئرمین تحریک انصاف اور سابق وزیراعظم عمران خان نے دورہ لاہور کے دوران وزیراعلیٰ ہاؤس میں وزیراعلیٰ چوہدری پرویزالٰہی سے ملاقات کی، جس میں پنجاب کابینہ کے ناموں پر مشاورت کی گئی۔ذرائع کا کہنا ہے کہ پی ٹی آئی کی طرف سے پنجاب کے وزیر داخلہ کے لئے پی ٹی آئی کے چیئرمین عمران خان اور وزیر اعلی پنجاب چوہدری پرویز الٰہی کے سامنے دو نام رکھے گئے جن میں سابق وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات فواد چوہدری اور سابق گورنر عمر سرفراز چیمہ کے نام پیش کیے گئے اور اس عہدے کے لیے ان دو ناموں پر مشاورت کی گئی مگر دونوں رہنماؤں میں کسی ایک نام پر بھی اتفاق نہ ہو سکا ذرائع کا کہنا ہے کہ چوہدری پرویز الہی صوبائی  وزیر داخلہ اپنی جماعت سے لانا چاہتے ہیں مگر پی ٹی آئی صوبائی وزیر داخلہ اور وزیر قانون اپنی جماعت سے لینا چاہتی ہے ذرائع کا کہنا ہے کہ سابق وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کی کابینہ میں شامل بہتر کارکردگی دکھانے والے وزرا ایک بار پھر کابینہ کا حصہ ہونگے، جبکہ چند مزید افراد کو بھی کابینہ میں شامل کیے جانے کا امکان ہے۔ذرائع کا یہ بھی کہنا ہے کہ عثمان بزدار کا نام بطور سینئر وزیر دیا گیا اس پر بھی غور کیا گیا مگر تاحال مشاورت بے نتیجہ رہی اس بات پر بھی غور کیا گیا کہ عثمان بزدار کی جگہ میاں محمودالرشید سینئر وزیر پنجاب بہتر رہیں گے مراد راس کو وزیر سکول ایجوکیشن، ڈاکٹر یاسمین راشد کو وزیرصحت، راجہ بشارت کو وزیرقانون اور ہاشم جواں بخت کو وزیر خزانہ اور راجہ یاسر ہمایوں کو وزیر ہائر ایجوکیشن، انفارمیشن ٹیکنالوجی اور ٹورازم بنائے جانے کا امکان ہے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ پنجاب کے وزیرداخلہ کیلئے فوادچوہدری اور عمرسرفرازچیمہ کے نام زیر غور ہیں جبکہ میاں اسلم اقبال کو کامرس اینڈ انڈسٹریز کا قلمدان دیا جائے گا۔محسن لغاری، فیاض الحسن چوہان، صمصام بخاری بھی کابینہ کا حصہ ہونگے، جبکہ کابینہ کیلئے ق لیگ کے ارکان اسمبلی کے ناموں پر بھی مشاورت کی گی۔

صوبائی وزیر داخلہ

مزید :

صفحہ اول -