آرمی چیف ملک کا حصہ، امریکی نمائندے سے بات کی تو کوئی مضائقہ نہیں: شاہد خاقان 

آرمی چیف ملک کا حصہ، امریکی نمائندے سے بات کی تو کوئی مضائقہ نہیں: شاہد ...

  

        اسلام آباد (این این آئی)پاکستان مسلم لیگ (ن) کے سینئر رہنما اور سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ آرمی چیف ملک کا حصہ ہیں،اگر وہ کسی سے بات کرتے ہیں تو ملک کیلئے کرتے ہیں اگر امریکی نمائندے سے بات ہوئی ہے تو کوئی مضائقہ نہیں،ہم نہ آتے تو آج ڈالر 400روپے تک پہنچ جاتا،جہاں پر ملک کو پہنچا دیا گیا تھا اس کو درست کرنا چند دنوں کی بات نہیں۔پیٹرول اور ڈیزل کی قیمت مفتاح اسماعیل کنٹرول کرسکتاہے نہ ہی حکومت کر سکتی ہے۔ایک انٹرویومیں شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ آرمی چیف، وزیر خزانہ اور گورنر سٹیٹ بینک حکومت پاکستان کا حصہ ہیں، جب مشکل حالات ہوتے ہیں تو سب حالات بہتر کرنے کی کوشش کرتے ہیں۔شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ ہم نہ آتے تو آج ڈالر 400 روپے تک پہنچ جاتا، جہاں پر ملک کو پہنچا دیا گیا تھا اس کو درست کرنا چند دنوں کی بات نہیں۔ایک انٹرویو میں انہوں نے کہا کہ آئی ایم ایف کیساتھ معاہدہ کر کے خلاف ورزی کی گئی، عمران خان نے پیٹرول مہنگا خرید کر کم پر بیچنا شروع کر دیا۔انہوں نے کہا کہ ہم نے اپنی سیاست کی قیمت ادا کر کے ملکی مفاد کو دیکھا، پہلے میں بھی حکومت بنانے کے حق میں نہیں تھا، ہم نہ آتے تو آج پاکستان سری لنکا سے بھی بدتر حالت میں ہوتا۔ 4 سال کی غفلت،کوتاہی،کرپشن اور نااہلی چار مہینے میں دور نہیں ہوسکتی۔

شاہد خاقان 

مزید :

صفحہ آخر -