آبی ذخائر کی عدم تعمیر، کابل سے ملنے والا 16لاکھ ایکڑ فٹ پانی سمندر کی نذر ہو گیا، رپورٹ

آبی ذخائر کی عدم تعمیر، کابل سے ملنے والا 16لاکھ ایکڑ فٹ پانی سمندر کی نذر ہو ...

  

        لاہور(این این آئی)ملک میں بڑے آبی ذخائر کی تعمیر نہ ہونے کی وجہ سے موجودہ سیزن میں صرف دریائے کابل سے ملنے والا 16لاکھ ایکڑ فٹ پانی سمندر کی نذر ہو گیا۔ رپورٹ کے مطابق دریائے کابل میں 1 لاکھ 7 ہزار کیوسک کے  سیلابی ریلے نے کالا باغ بیراج پرسندھ میں ضم ہوکر ساڑھے 3 لاکھ کیوسک حجم کے ساتھ پنجند کی طرف سفر کیا،جہاں اس میں چناب اور جہلم کے 95 ہزار کیوسک بھی شامل ئے۔رپورٹ کے مطابق اگر کالا باغ /پاکستان ڈیم بنا ہوتا تو کابل کا پانی وہاں ذخیرہ کر کے سندھ کو نہ صرف سیلاب سے بچایا جاسکتا تھا بلکہ آئندہ گندم کی فصل کو آج زحمت دکھنے والے ریلے رحمت بن کر سیراب کرتے۔رپورٹ میں افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہاگیا ہے کہ  یہ پانی گندم کے فصل کے لئے خشک سالی کے دوران کسانوں کی آنکھوں سے بہتا نظر آئے گا۔

رپورٹ

مزید :

صفحہ آخر -