عوامی فلاح وبہبود کیلئے محکمہ سماجی بہبود کا بجٹ بڑھایا،انور زیب

     عوامی فلاح وبہبود کیلئے محکمہ سماجی بہبود کا بجٹ بڑھایا،انور زیب

  

 پشاور(سٹاف رپورٹر)خیبر پختونخوا کے وزیر زکوٰۃ وعشر سماجی بہبود خصوصی تعلیم اور ترقی خواتین انورزیب خان نے تعلیم حاصل کرنے والے ضلع باجوڑ کے خصوصی بچوں اور بچیوں میں رحمت اللعامین ﷺسکالرشپ کے چیکس تقسیم کئے گزشتہ روز سول کالونی خار جرگہ ہال ضلع باجوڑ میں محکمہ زکوۃوعشر سماجی بہبود خصوصی تعلیم اورترقی خواتین برائے ضم اضلاع کے زیر اہتمام ایک تقریب منعقد ہوا جس میں صوبائی وزیر انورزیب خان نے بطور مہمان خصوصی شرکت کی جبکہ تقریب میں دیگر کے علاوہ ممبر صوبائی اسمبلی اجمل خان، ناظم سب ڈویژن ناوگئی، ڈی پی او باجوڑ، اے ڈی سی و دیگر محکموں کے افسران بھی موجود تھے  صوبائی وزیر انورزیب خان نے خصوصی بچوں اور بچیوں میں فی کس 50ہزار روپے کے چیکس تقسیم کئے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے صوبائی وزیر نے کہا کہ عوامی فلاح وبہبود کیلیے رواں مالی سال میں محکمہ سماجی بہبود کا بجٹ بڑھایاہے تاکہ معاشرے کے بے سہارا،  معالی طور پر کمزور،  بیواؤں،  یتیموں اور مستحقین زیادہ تعداد میں مستفید ہوسکے رحمت اللعامینﷺسکالرشپ کے حوالے سے صوبائی انورزیب خان کا کہنا تھا کہ موجودہ صوبائی نے ایک عظیم اقدام اٹھایا ہے اور اس سکالرشپ کے زریعے وہ طلباؤطالبات جن کے والدین اپنے بچوں کے تعلیمی اخراجات برداشت نہیں کرسکتے حکومت کی طرف سے ان بچوں اور بچیوں کو تعلیم کے حصول کیلیے 50ہزار روپے دی جارہی ہے انہوں نے کہا کہ معاشرے کے کمزور طبقے کو ذیادہ سے ذیادہ سہولیات کی فراہمی کیلیے صوبائی حکومت اور میں زاتی طور پر ہر ممکن کوشش کرتاہوں رواں مالی سال میں محکمے کا بجٹ بڑھانے پر وزیر اعلء محمود خان کا شکریہ ادا کرتاہوں صوبائی وزیر انورزیب خان نے ضلع باجوڑ کے 112  مستحق سپیشل طلباؤطالبات میں فی کس 50 ہزار روپے کے چیکس تقسیم کئے جبکہ پورے  ضم اضلاع کے 1000 مستحق سپیشل سٹوڈنٹس میں 5 کروڑ روپے تقسیم کئے جائینگے اس موقع پر صوبائی وزیر انورزیب خان نے متعلقہ حکام کو ہدایات جاری کرتے ہوئے کہا کہ عوام کے فلاح و بہبود کیلئے اپنے کام ایمانداری سے جاری رکھتے ہوئے خصوصاً سپیشل افراد کو زیادہ سے زیادہ سہولیات کی فراہمی کو یقینی بنائیں انہوں کہا کہ رحمت اللعامین ﷺ سکالرشپ میرٹ اور شفافیت کی بنیاد پر ضم قبائلی اضلاع کے مستحقین میں تقسیم کیا جارہا ہیں۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -