وزیرستان گیس پر پہلا حق ہما را ہے: قومی مشران 

    وزیرستان گیس پر پہلا حق ہما را ہے: قومی مشران 

  

       بنوں (نمائندہ خصوصی)ضلع بنوں کے منتخب ممبران،سیاسی جماعتوں اور قومی مشران نے وزیرستان میں دریافت ہونے والی گیس سے پنجاب کو گیس فراہمی کیلئے بچھائی جانے والی گیس پائپ لائن پر کام بند کرواکے دھرنا دیدیا اور اعلان کیا ہے کہ جب تک بنوں کو گیس اور مراعات فراہمی کی یقین دہانی نہیں کرائی جاتی یہ گیس پائپ لائن ہماری لاشوں پر ہی گزاری جائیگی اس سلسلے میں کام بند کروانے کے بعد تحصیل میریان کے قومی جرگہ سے خطاب کرتے ہوئے پی ٹی آئی کے ممبر صوبائی اسمبلی ملک پختون یار خان نے کہا کہ گیس کیلئے ہمارے ایم این اے بھی قومی اسمبلی میں آوازا اٹھارہے ہیں صوبائی وزیر ملک شاہ محمد خان اور ہم نے بھی صوبائی اسمبلی فلور پر آواز اٹھائی ہے اور قرارداد جمع کرائی ہے جس پر ایک دو روز میں اجلاس میں عمل ہوگا جبکہ وزیراعلیٰ نے گیس کمپنیوں اور محکمہ گیس کے اعلیٰ آفسران کی میٹنگ بلائی ہے لیکن میں کسی منتخب نمائندے کو کریڈٹ نہیں دوں گا بلکہ کریڈٹ ان نوجوانوں کو دوں گا جنہوں نے بروقت آواز اٹھائی اور گیس پائپ لائن پر کام بند کردیا وزیراعظم نے اور محکمہ گیس حکام نے پورے بونں کو گیس،ایس ایم ایس اور مراعات کی یقین دہانی نہ کرائی تو اس اگست تو کیا اگست2023تک بھی گیس پائپ لائن مکمل نہیں ہونے دیں گے اور یہ پائپ ہماریہ لاشوں پر گزرے گی جس میں گیس نہیں ہمارا خون پنجاب جائیگا ہم پنجاب کو گیس دینے کے خلاف نہیں لیکن آئین اور قانون کے مطابق پہلے وزیرستان،بنوں اور قریبی علاقوں کو حق دینا ہوگا کیونکہ ابھی تک شمشی خیل اور غوریوالہ کو بھی گیس اور زمینوں کا معاوضہ نہیں دیا گیا ہے تحصیل میئر بنوں عرفان درانی نے کہا کہ ڈپٹی سپیکر قومی اسمبلی اور ایم این اے بنوں زاہد اکرم درانی نے گی ایم محکمہ گیس اور دیگر حکام کے ساتھ میٹنگ کی ہے اور وزیر اعظم کی سخت ہادایات ہیں کہ اگست میں گیس پنجاب تک ہر صورت پہنچائی جائے چیف آف میریان ملک دلنواز خان،تحصیل میئر پیرسید کمال شاہ،سابقہ تحصیل میر امیدوار ملک اقبال جدون خان،سابقہ امیدوار صوبائی اسمبلی وقار خان،چیف آرگنائزر صفی اللہ گوہر،سلیم آزاد،چیئرمین پیر جمشید،ملک ادریس خان،ڈاکٹر حمید اللہ،چیئرمین ملک میر محمدحیات خان،نصر اللہ جان ودیگر مقررین نے کہا کہ صرف گیس کا نلکا نہیں چاہیئے بلکہ گیس ریفائنری،مراعات،کلاس فور بھرتی کاحق اور روزگار بھای چاہیئے،ہم ہر سیاسی جماعت اور ممبران اسمبلی کا شکریہ ادا کرتے ہیں جو بھی گیس کیلئے کوشش کرتا ہے ہم ان کا شکریہ ادا کرتے ہیں احتجاجی تحریک کو کامیابی سے چلانے کیلئے مشران پر مشتمل کمیٹی بھی بنائی گئی اور اعلان کیا گیا کہ مکمل مراعات اور گیس فراہمی کے نوٹیفیکشن تک گیس پائپ لائن پر کام بند رہیگا کینکہ اگر یہ موقع ہم نے ضائع کیا تو ناقابل تلافی نقصان ہوگا اور اگر کامیابی حاصل کی تو ہماری آنے والی نسلیں مزدوری کیلئے دبئی اور سعودی عرب نہیں جائیں گی۔مذید کہا کہ ہمارے ڈویژن میں دریافت ہونے والی گیس سے پنجاب کو پائپ لائن بچھانے کا20کلومیٹر کام مکمل بھی کرلیا گیاہماری زمینیوں پر بھی پائپ بچھائے گئے لیکن ہم سے کسی نے پوچھا تک نہیں۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -